سٹیٹ بینک کا شرح سود میں مزید اضافے کا اعلان

سٹیٹ بینک کا شرح سود میں مزید اضافے کا اعلان


کراچی (24 نیوز) سٹیٹ بینک نے اگلے دو ماہ کے لیے مانیٹری پالیسی کا اعلان کر دیا، بنیادی شرح سود 120 پوائنٹ کے اضافے سے 8.5 فیصد کر دی گئی ہے۔

سٹیٹ بینک کےمطابق ملک میں انتقال اقتدار کے بعد سیاسی بے یقینی ختم ہو گئی، لیکن بڑھتی ہوئی مہنگائی اور مالیاتی خسارے کے باعث معاشی صورتحال کے بارے خدشات برقرار ہیں۔ خام تیل کی قیمت میں اضافہ اورعالمی معاشی صورتحال میں ہونےوالی تبدیلیاں پاکستان کے لیے مشکلات کا باعث بنیں گی،مرکزی بینک کے اعلامیہ کے مطابق جاری مالی سال میں معاشی سرگرمیاں قدرے سست رہیں گی جس کے پیش نظر مانیٹری پالیسی کمیٹی نے شرح سود120 پوائنٹ بڑھا کر8 اعشاریہ 5 فیصد کردی ہے۔

ماہرین کے مطابق آئی ایم ایف سے قرض لینے کے پیش نظر شرح سود میں اضافہ کیا جا رہا ہے، شرح سود میں اضافے سے صنعتی شعبہ براہ راست متاثر ہو گا، بینکوں سے مہنگا قرض ملنے کے باعث کاروباری لاگت مزید بڑھے گی جبکہ مہنگائی میں اضافہ بھی متوقع ہے۔ گزشتہ چار مہینے کے دوران شرح سود میں 2.5 فیصد اضافہ کیا جا چکا ہے، واضح رہے نئی شرح سود کا اطلاق یکم اکتوبر سے ہوگا۔