پیپلز پارٹی کے اہم رکن نے حکومت کا شکریہ ادا کر دیا ، مگر کیوں؟


کرم ایجنسی(24نیوز) لوڈشیڈنگ کے خاتمے کیلئے کے پی حکومت نے مائیکرو ہائیڈرو پاور اسٹیشن قائم کرنا کا شروع کردئیے، منصوبے کو مقامی آبادی نے خوش آئند قرار دیا، شہرقائد کے باسیوں کی بجلی لوڈشیڈنگ سے جان نہ چھوٹی،مختلف علاقوں میں9 گھنٹوں کی بجلی کی بندش سے شہری پینے کے پانی کوبھی ترس گئے۔

تفصیلات کے مطابق دریائے کرم کے کنارے مائیکرو ہائیڈرو پاور اسٹیشن منصوبے پر کام شروع ہوگیا ہے۔ اپر کرم کے علاقہ نور خان کنڈا میں ایک کروڑ روپے کی لاگت سے مائیکرو ہائیڈرو پاور اسٹیشن مکمل ہوگیا۔

عمائدین نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ 20 سے 22 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ سے نجات مل گئی۔ اب انہیں رات میں روشنی کے علاوہ فریج، پنکھے سمیت دیگر ضروریات کیلئے بلا تعطل بجلی میسر ہوتی ہے۔

پیپلز پارٹی کرم ایجنسی کے صدر جمیل طوری نے منصوبے پر حکومت کا شکریہ ادا کیا اور مطالبہ کیا ہے کہ دریا کرم پر مزید پاور اسٹیشنز قائم کر دئیے جائیں تو پورے علاقہ کو لوڈ شیڈنگ سے مکمل طور پر نجات مل سکتی ہے۔

قبائل کی عوام کا کہنا تھا کہ کرم ایجنسی میں دریا کرم کے پانی سے جہاں مقامی آبادی کو بجلی کی سہولت میسر آئی وہیں دوسرے علاقوں کو بھی بجلی فراہم کی جاسکتی ہے۔

دوسری جانب وزیراعظم کا کراچی دورے پرلوڈشیڈنگ کے خاتمے کااعلان محض دعوی ہی نکلا۔ کراچی کے علاقے کورنگی، لانڈھی قیوم آباد ،لیاری ، ابراہیم حیدر،نارتھ کراچی ، پاورہاوس چورنگی اور اورنگی میں اعلانیہ 9 گھنٹے اوربجلی فالٹ کے نام پرغیراعلانیہ لوڈشیڈنگ نے عوام کا جینا دوبھر کردیا۔