وزیر اعظم پاکستان، آرمی چیف کا دورہ میران شاہ، فاٹا کو قومی دھارے میں جلد شامل کرنیکا اعلان


اسلام آباد (24 نیوز) پاکستان کے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اور چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کا دورہ میران شاہ ، نئے بازار، بس ٹرمینل اور غلام خان این ایل سی ٹرمینل کا افتتاح۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اور آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے شمالی وزیر ستان کے علاقہ میران شاہ اور غلام خان کا دورہ کیا۔ وزیر اعظم نے شہدا کی یادگار پر پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی۔

اس موقع پر وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ قبائلی عوام کو ترجیحی بنیادوں پر بنیادی سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ فاٹا میں فوج نے اپنی ذمہ داریاں ادا کر دیں، اب سیاسی انتظامیہ کا کام ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے میران شاہ مارکیٹ کمپلیکس کا افتتاح کیا۔ جس میں 1344 دکانیں شامل ہیں۔ جسے پاک فوج کے انجینئرز نے بنایا ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے غلام خان ٹریڈ ٹرمینل کا افتتاح بھی کیا جو سینٹرل ٹریڈ کوریڈور کا حصہ ہے۔

ان منصوبوں سے ایجنسی میں تجارتی اور کاروباری سرگرمیوں کو فروغ ملے گا۔ نیا ٹریڈ ٹرمینل سینٹرل ٹریڈ کوریڈور کی حیثیت رکھتا ہے۔ ٹریڈ ٹرمینل مواصلاتی انفراسٹرکچر مارکیٹ کمپلکس کو سی پیک سے منسلک کرے گا۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ فاٹا کو قومی دھارے میں شامل کیا جائے گا اور اس سلسلہ میں تمام سیاسی جماعتیں سنجیدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میران شاہ کو ترقی دی جائے گی۔وزیراعظم نے قبائلی عمائدین کے جرگہ سے خطاب میں کہا کہ میران شاہ سنٹرل ایشیاکاگیٹ وے اور تجارت کیلئے اہم ہے، فاٹا کےعوام کوبھی لاہوراوردیگرعلاقوں کی طرح سہولیات ملنی چاہیں، فاٹا کو قومی دھارے میں شامل کرنے پر تیزی سے کام جاری ہے، اتمانزئی مشران نے ضرب عضب کے متاثرین کے ساتھ وعدہ وفا کرنےکا مطالبہ کیا۔

وزیر اعظم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قبائلیوں کی غیر متزلزل حمایت کو سراہتے ہوئے کہا کہ فاٹا کو قومی دھارا میں لانا اس علاقہ کی طویل مدتی ترقی و خوشحالی کے لیے اہم ہے۔ اس موقع پر بری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ، گورنر خیبرپختونخوا اقبال ظفر جھگڑا اور کور کمانڈر پشاور لیفٹیننٹ جنرل نذیر احمد بٹ بھی موجود تھے۔