ڈاکٹرز احتجاج پر اترآئے ، مریض خوار ہونے لگے

ڈاکٹرز احتجاج پر اترآئے ، مریض خوار ہونے لگے


پشاور ( 24نیوز ) خیبرپختونخوا کے ڈاکٹرز تبادلوں کےخلاف ڈٹ گئے،ہڑتال کا دائرہ بڑے تدریسی ہسپتالوں تک پھیلا دیا, مریض ہسپتالوں میں خوار ہونے لگے۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ صحت کے بحران میں شدت کی وجہ سے حکومت کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا، مسیحا ایکبار پر احتجاج پر اترآئے ڈاکٹروں نے ہڑتال کا دائرہ بڑے تدریسی ہسپتالوں تک وسیع کردیا،خیبر ٹیچنگ ہسپتال اور حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں ڈاکٹروں کی ہڑتال سے اوپی ڈی ،کارڈیک اور کڈنی ہسپتال اور دیگر سروسز معطل ہیں جس کے باعث مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

 ڈاکٹر تنظیموں نے حکومت کی کارروائی کی دھمکی نظرانداز کردی، ڈومیسائل کی بنیاد پر تبادلوں اور مجوزہ ہیلتھ اتھارٹیز کے خلاف ہڑتال جاری رکھنے کا عندیہ دیا، خیبرپختونخوا ڈاکٹرز کونسل نےنجی کلینکس بھی بند کرنے کا اعلان کیا۔

دوسری جانب ہسپتال ذرائع کاکہناتھاکہ او پی ڈی میں تمام سروسز ہسپتال کے سنیر ڈاکٹرز انجام دے رہے ہیں،کچھ ڈاکٹرز کے ہڑتال سے کچھ نہیں ہوتا۔