قابض بھارتی فوج کا ظلم و تشددجاری، ایک اور کشمیری شہید

12:45 PM, 30 Aug, 2018

اظہر تھراج

سر ی نگر(24نیوز)مقبوضہ وادی میں بھارتی فوج کی ظلم و بربریت جاری ہے،باندی پوررہ میں بھارتی فوج کی فائرنگ سے ایک اور کشمیری نوجوان شہید ہوگیا، وادی میں غیر کشمیری بستیوں کے متنازعہ قانون کیخلاف پوری وادی میں دو روزہ ہڑتال کا آج پہلا دن ہے۔
غیر کشمیریوں کو زمین خریدنے کا حق دینے کی بھارتی سازش کے خلاف مقبوضہ کشمیر میں آج مکمل ہڑتال ہے۔ قابض فورسز نے آج صبح ضلع باندی پورہ کے علاقے حاجن کا محاصرہ کیا اور ایک کشمیری کو فائرنگ کرکے شہید کردیا۔چوبیس گھنٹوں میں قابض فوج کی فائرنگ سے شہید ہونے والوں کی تعداد تین ہوگئی۔مقبوضہ وادی میں حریت قیادت کی اپیل پر آج مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال کی ہے۔ کشمیری مسلمانوں کو احتجاج میں شرکت سے روکنے کیلئے قابض فوج نے میر واعظ عمر فاروق کو گھر میں نظر بند کردیا۔
بھارتی سپریم کورٹ میں آرٹیکل 35 اے کی منسوخی سے متعلق کیس کی سماعت کل ہوگی، بھارتی حکمران جماعت غیر کشمیریوں کو وادی میں زمین خریدنے کا حق دینے کی سازش کررہی ہے۔سری نگر میں حزب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین کے بیٹے سید شکیل احمد کو گرفتار کر لیا گیا،گرفتاری2011میں بنائے گئے دہشت گرد فنڈ کیس میں ظاہر کی گئی ہے،گرفتار ہونے والے سید شکیل احمدسری نگر میں واقع شیرکشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس میں بطور سینئر ٹیکنیشن خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔

مزیدخبریں