دھرنوں، احتجاجی سیاست نے ایشیا کی اسٹاک مارکیٹ کو بدترین بنا دیا

دھرنوں، احتجاجی سیاست نے ایشیا کی اسٹاک مارکیٹ کو بدترین بنا دیا


کراچی (24 نیوز) دھرنوں اور احتجاجی سیاست نے ایشیا کی بہترین اسٹاک مارکیٹ کو سال 2017 کے دوران ایشیا کی بدترین مارکیٹ بنا دیا، پاکستان اسٹاک ایکس چینج انڈیکس 15.35 فیصد گر گیا، سرمایہ کاروں کے 10 کھرب 58 ارب روپے ڈوب گئے۔

سال کے دوران پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے بنچ مارک ہنڈرڈ انڈیکس میں 7 ہزار 336 پوائنٹ کی کمی ریکارڈ کی گئی۔ جنوری سے دسمبر تک ہنڈرڈ انڈیکس 47 ہزار 806 سے کم ہو کر 40 ہزار 471 پر آ گیا، سال 2016 میں انڈیکس میں 46 فیصد اضافے سے پاکستان کی اسٹاک مارکیٹ ایشیا کی نمبر ون مارکیٹ بن گئی تھی۔

سال کے دوران پاکستان اسٹاک میں شئیرز کی مجموعی مالیت 10 کھرب 58 ارب روپے کی کمی سے 85 کھرب 71 ارب روپے سے بھی کم رہ گئی، جبکہ کاروبار میں بھی گزشتہ سال کے مقابلے میں تقریبا 16 فیصد کمی دیکھی گئی۔ غیر ملکی سرمایہ کاروں نے بھی مارکیٹ سے 49 کروڑ 5 لاکھ ڈالر نکال لیے۔ سی این بی سی کے مطابق 2017 کے دوران پاکستان کے سوا ایشیا کی دوسری تمام بڑی مارکیٹوں میں تیزی رہی۔