سانحہ بلدیہ کیس: مرکزی ملزم اعترافی بیان سے مکر گیا

سانحہ بلدیہ کیس: مرکزی ملزم اعترافی بیان سے مکر گیا


کراچی (24 نیوز) سانحہ بلدیہ کیس میں ڈرامائی موڑ، مقدمہ کا مرکزی ملزم رحمان بھولا اپنے اعترافی بیان سے مکر گیا۔

کراچی کی انسداد دہشتگردی کی عدالت میں سانحہ بلدیہ کیس سماعت ہوئی تو کیس کا مرکزی ملزم رحمان بھولا اپنے اعترافی بیان سے انکاری ہوگیا۔

رحمان بھولا نے کہا کہ میں نے زیر دفعہ164 کا بیان اپنی مرضی سے ریکارڈ نہیں کرایا۔ بلدیہ فیکٹری کو آگ لگائی نا ہی اعترافی بیان ریکارڈ کرایا بلکہ بیان زبردستی لیا گیا۔

ملزم رحمان بھولا نے ملزم رضوان قریشی کی جے آئی ٹی کی کاپی حاصل کرنے کے لیے درخواست دائر کردی۔ دوسری جانب ملزمان ڈاکٹر عبدالستار، عمر حسن قادری، ادیب اقبال خانم اور دیگر نے تفتیشی افسر کو بیان ریکارڈ کرادیا۔

عدالت نے ادیب اقبال خانم کو حاضری سے مستثنیٰ قرار دے دیا۔ مقدمہ میں عدالت نے ایم کیوایم کے رہنما رؤف صدیقی کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

پراسیکیوٹر ساجد محبوب کے مطابق پولیس نے رؤف صدیقی کو چالان کے کالم نمبر دو میں رکھا تھا۔ اس کالم میں رکھے گئے ملزمان ٹرائل کا سامنا کررہے ہیں۔ عدالت نے کیس کی مزید سماعت 3 جنوری تک ملتوی کر دی۔