آئی ایم ایف بورڈ کی پاکستان کی معاشی کارکردگی پر تجزیاتی رپورٹ جاری

آئی ایم ایف بورڈ کی پاکستان کی معاشی کارکردگی پر تجزیاتی رپورٹ جاری


اسلام آباد(24 نیوز) آئی ایم ایف نے پاکستان کی معاشی کارکردگی کا فرسٹ ریویو مکمل ہونے پر وزارت خزانہ نے اسسمنٹ رپورٹ جا ری کردیا۔

آئی ایم ایف نے پاکستان کی معاشی کارکردگی کا فرسٹ ریویو مکمل ہونے پر وزارت خزانہ نے اسسمنٹ رپورٹ جا ری کردی ہے۔ ترجمان وزارت خزانہ نے کہا کہ آئی ایم ایف نے تسلیم کیا کہ پاکستان کا اصلاحاتی پروگرام ٹریک پر ہے، پاکستان کے اصلاحاتی پروگرا م کے نتائج سامنے آرہے ہیں، آئی ایم ایف نے رپورٹ میں اعتراف کیا ہے کہ کاروباری ماحول میں بہتری آئی ہے، پاکستان کی معیشت میں بہتری اور مالی استحکام کے لیے فیصلہ کن پالیسی پر عمل درآمد شروع ہوا ہے۔

اعلامیہ میں کہا گیا کہ پاکستان کے دائرے میں مسائل اصلاحات کے باعث کم ہورہے ہیں، مارکیٹ میں اعتماد بڑھنا شروع ہو گیا ہے، آئی ایم ایف نے کل 1.45 ارب ڈالر کا قرضہ ریلیز کردیا ہے، آئی ایم ایف کی شرائط پر کامیابی سے عمل جاری ہے، منی لانڈرنگ اور تخریبی فنانس کے خلاف اقدامات کے علاوہ تمام شرائط پر عمل درآمد جاری ہے۔

اعلامیہ میں کہا گیا کہ مالی سال 2020 میں مہنگائی کی شرح 5فیصد تک لائی جائیگی، مالی سال کی پہلی سہہ ماہی میں جاری کھاتوں کے خساروں میں 2 اعشاریہ 4فیصد کمی ریکارڈ کی گئی، ملک میں امپورٹس میں 23 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی، بہتر پالیسیوں کی وجہ سے ٹیکس وصولی دوگنی ہوئی ہے، مالی سال 2019 جولائی میں ماہانہ گردشی قرضہ 38ارب روپے تھا۔

اعلامیہ میں کہا گیا کہ گردشی قرضہ کم ہوکر 10ارب روپے ماہانہ ہورہا ہے، پاور سیکٹر مالی سال 2020 میں 250 ارب روپے کے سکوک بانڈز جاری کریگا، نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم 20 سے 30 ارب روپے کی اضافی رقم جاری کی جائیگی، ایکسپورٹرز کو ایکپسورٹ پیکج کے تحت 200ارب روپے کی امداد فراہم کی جائیگی۔ جس سے ملک میں ایکپسورٹ میں اضافہ ہوگا۔

Malik Sultan Awan

Content Writer