راحت فتح علی خان پر کرنسی اسمگلنگ کا الزام، شو کاز نوٹس جاری

راحت فتح علی خان پر کرنسی اسمگلنگ کا الزام، شو کاز نوٹس جاری


لاہور(24نیوز) گلوکار  راحت فتح علی خان  کو غیر ملکی کرنسی رکھنے سے متعلق قوانین کی خلاف ورزی پر بھارتی نفاذ کے ڈائریکٹوریٹ کی جانب سےشوکاز نوٹس جاری کردیا گیا،  راحت فتح علی خان  45 یوم میں شوکاز نوٹس کا جواب دیں گے۔

معروف گلوکار  راحت فتح علی خان  کو 2011 میں بھارت سے پاکستان آنے پر بھارتی ریونیو انٹیلی جنس نے دہلی ایئرپورٹ پر بغیر بتائے تقریباً 2 کروڑ رکھنے کے الزام میں پکڑلیا تھا۔ بعد ازاں ان کے خلاف فارن ایکسچینج مینجمنٹ ایکٹ کے تحت 2014 میں تفتیش کا آغاز کیا اور اب انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے اسی کیس میں شوکاز نوٹس میں 46 روز میں جواب طلب کیا ہے۔

2011 میں  راحت فتح علی خان  نے دوران تفتیش اتنی بڑی رقم کی موجودگی کا جواز بتاتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اپنے گروپ کے کے ساتھ سفر کررہے تھے، اسی وجہ سے اُن کے پاس یہ رقم تھی۔ بھارتی قوانین کے مطابق کوئی بھی شخص زیادہ سے زیادہ 5  ہزار ڈالرز نقد اور 5 ہزار ٹریولرز چیک کی صورت میں بھارت لاسکتا یا لے جاسکتا ہے۔

اگر کسی کے پاس اس سے زیادہ رقم ہو تو کسٹمز حکام کو آگاہ کرنا لازم ہے۔ تاہم  راحت فتح علی خان  پر الزام تھا کہ اُن کے پاس 10 ہزار ڈالرز سے زیادہ رقم تھی۔ لیکن انہوں نے کسٹم حکام سے رابطہ نہیں کیا تھا۔ دوسری جانب  راحت فتح علی خان  کی ایونٹ ٹیم کا کہنا ہے کہ انہیں کوئینوٹس موصول نہیں ہوا۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔