جماعت اسلامی نے مولانا فضل الرحمان کی تجویز مسترد کردی

جماعت اسلامی نے مولانا فضل الرحمان کی تجویز مسترد کردی


لاہور( 24نیوز ) متحدہ مجلس عمل میں اختلافات، جماعت اسلامی نے اسمبلیوں میں حلف نہ اٹھانے کی مولانا فضل الرحمن کی تجویز مسترد کرتے ہوئے پارلیمنٹ کے اندر سیاست کرنے کا اعلان کردیا،ینڑ سراج الحق کہتے ہیں کہ نئی حکومت کو موقع دیں گے کہ وہ سو دن کے پروگرام پر عملدرآمد کریں۔
منصورہ مین جماعت اسلامی کی مجلس شوریٰ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سینٹر سراج الحق نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ من پسند نتائج حاصل کرنے کے لئے ریاستی اداروں کا استعمال کیا گیا، قومی سیاستدانوان کو منظر عام سے ہٹانے کے لئے ایڑی چوٹی کا زور لگا کر من پسند افراد کو جتوایا گیا۔ جس طریقے سے الیکشن کروائے گئے جیتنے والے بھی شرمسار ہوگئے ہیں۔

 یہ بھی پڑھیں:  مولانا فضل الرحمان کی لاٹری لگنے والی ہے!
الیکشن کمیشن ، نگران حکومت اور ریاستی ادارے کٹہرے میں نظر آرہے ہیں، الیکشن کے عمل کو مشکوک بنایا گیا ہے،سینٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ جمہوریت کی گردن پر انگوٹھا رکھ کر جمہوریت کی روح نکالنے کی کوشش کی گئی ہے، مخالفت برائے مخالفت کی سیاست پر یقین نہیں رکھتے، ، نئی حکومت کو کام کرنے کا موقع دینا چاہتے ہیں کہ وہ اپنے سو دن کے پروگرام پر عمدرآمد کریں عمران خان کیے گئے وعدوں کو پورا کریں۔پارلیمان کے اندر اپوزیشن کا بھرپور کردار ادا کریں گے۔ عمران خان نے جو وعدے کیے تھے انہیں اب حکومت میں پورا کرکے دکھائیں۔

 یہ بھی پڑھیں: عمران خان کا خواب ٹوٹ جائیگا؟
امیر جماعت اسلامی نے مطالبہ کیا کہ الیکشن کمیشن اور نگران حکومت غیر جانبدار الیکشن کروانے میں ناکام رہی ہے ، جن سیاسی جماعتوں کو جن جن حلقوں میں اعتراضات ہیں انہیں دور کرنے اور تحقیقات کے لئے کمیشن بنایا جائے۔