اسٹیٹ بینک کی پابندی کے بعد مارکیٹ سے خریدارغائب

اسٹیٹ بینک کی پابندی کے بعد مارکیٹ سے خریدارغائب


  24نیوز : اسٹیٹ بینک کی طرف سے اندرون ملک کیش کی صورت میں ڈالر کی نقل و حمل پر پابندی کے بعد مارکیٹ سے خریدار غائب ، ڈالر مزید تین روپے سستا ہو گیا، اوپن مارکیٹ میں 122 روپے کا بکنے لگا۔

تفصیلات کے مطابق ہفتے کے پہلےروز ٹریڈنگ کےدوران ڈالر کی قیمت میں تین سے چارروپے تک کی کمی دیکھی گئی، انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر 122 روپے 50 پیسے کا بھی فروخت ہوا، تاہم اسٹیٹ بینک کےمطابق کاروبارکے اختتام پر ڈالر کی قدر 2 روپے 82 پیسے کی کمی سے 125 روپے4 پیسےرہی۔

یہ بھی پڑھیں:اسٹیٹ بینک کے غیرمعمولی اقدامات، ڈالر نیچےآنےلگا 

جبکہ ایکس چینج کمپنیز ایسوسی ایشن کے مطابق اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت فروخت 2 روپے کی کمی سے122 روپے رہ گئی، مارکیٹ ذرائع کےمطابق اسٹیٹ بینک کی پابندی کے باعث مارکیٹ میں ڈالر کی دستیابی تو بڑھ گئی لیکن خریدار موجود نہیں۔ فاریکس ڈیلرزکےمطابق اوپن مارکیٹ میں پچانوے فیصد سے زیادہ ڈالر بیچنے والے جبکہ پانچ فیصد سے بھی کم خریدار ہیں۔

پڑھنا نہ بھولیں:کراچی میں ایشیا کی سب سےبڑی مویشی منڈی قائم 

ذرائع کے مطابق ملک میں سیاسی بے یقینی کے خاتمے، چین کی طرف سے سستے ریٹ پر دو ارب ڈالر کے نئے قرضے اور اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کی طرف سے تیل کی خریداری کے لیے فنانسنگ کی منظوری کی خبروں کے باعث بھی ڈالر کی بے قدری ہو رہی ہے۔