جج ویڈیو سکینڈل ،ناصر جنجوعہ کی مشروط عبوری ضمانت منظور

جج ویڈیو سکینڈل ،ناصر جنجوعہ کی مشروط عبوری ضمانت منظور


اسلام آباد( 24نیوزعدالت نے  جج ویڈیو سکینڈل کےمبینہ مرکزی کردار ناصر جنجوعہ کی مشروط عبوری ضمانت منظور کر لی۔

تفصیلات کے مطابق  جج ویڈیو سکینڈل   کےمبینہ مرکزی کردار ناصر جنجوعہ کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی، انسداد الیکڑانک کرائم کورٹ کے جج راجہ جواد عباس نے سماعت کی، ناصر جنجوعہ اپنے وکیل کے ہمراہ عدالت پیش ہوئے، ناصر جنجوعہ کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ناصر جنجوعہ نے تفتیش جوائن کر لی ہے،وہ دو مرتبہ تفتیشی ٹیم کے سامنے پیش ہوئے ہیں۔

وکیل کا کہناتھا کہ ایف آئی آر میں ناصر جنجوعہ پر براہ راست کوئی الزام نہیں،اسلام آباد ہائی کورٹ نے 30 جولائی تک ضمانت قبل از گرفتاری منظور کی ہے، ناصر جنجوعہ کو نواز شریف کا دوست ہونے کی وجہ سے کیس میں ملوث کیا جا رہا ہے،اسلام آباد ہائی کورٹ نے کل تک ضمانت میں توسیع کی ہے۔

ایف آئی اے کے وکیل کا کہناتھا کہ ایف آئی آر میں ناصر جنجوعہ کا نام شامل ہے،ملزم سے آڈیو اور ویڈیو ریکارڈنگ کے ثبوت حاصل کرنے ہیں، عدالت نے ریماکس دیتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کی کاپی پیش کرنے تک مشروط ضمانت منظور کرتے ہیں،فیصلے کی کاپی کل عدالت میں پیش کی جائے،بعدازاں ناصر جنجوعہ کی  مشروط عبوری ضمانت پانچ لاکھ کے مچلکوں کے عوض منظور کرلی گئی۔