تمام صوبوں میں نگران وزرائے اعلیٰ کا تقرر مسئلہ بن گیا


کراچی( 24نیوز ) سندھ اورخیبر پختونخوا کی اسمبلیاں تحلیل مگر نگران وزیراعلیٰ کے نام پر اتفاق نہ ہوسکا، بلوچستان اسمبلی بھی کل رات تحلیل ہوجائے گی لیکن نگران وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لیے آج آخری روز ہے،اتفاق نہ ہواتومعاملہ پارلیمانی کمیٹی کے پاس جائے گا۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ نگراں وزیراعلیٰ کے لیے وزیراعلیٰ سندھ اور اپوزیشن لیڈرخواجہ اظہارالحسن کے درمیان آج وزیراعلیٰ ہاوس میں ملاقات کا امکان ہے جس کے دوران نگراں وزیراعلیٰ کے لیے ناموں پر مشاورت کی جائے گی، پیپلز پارٹی کی جانب سے نگراں وزیراعلیٰ سندھ کے لیے ڈاکٹر قیوم سومرو اور ڈاکٹر یونس سومرو کے ناموں پر غور کیا گیا ہے جب کہ اپوزیشن کی جانب سے سابق چیف سیکرٹری فضل الرحمان کا نام سامنے آیا،وزیراعلیٰ سندھ نے گزشتہ روز اعلیٰ قیادت سے بھی ملاقات کی تھی جس میں انہوں نے نگراں وزیراعلیٰ کے نام پر مشاورت کی۔

یہ بھی پڑھیں:  ایران پاکستان گیس منصوبہ عالمی پابندیوں کے باعث التوا کا شکار ہے: وزیر اعظم

دوسری جانب بلوچستان میں بھی نگراں وزیراعلیٰ کے نام پر اتفاق نہ ہوسکا اور حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ڈیڈ لاک برقرار ہے،حزب اختلاف اور حزب اقتدار کی جانب سے 5 نام تجویز کیے گئے ہیں جن میں حکومت کی جانب سے تین جب کہ اپوزیشن نے 2 نام تجویز کیے،وزیراعلیٰ بلوچستان اور اپوزیشن کے پاس نگراں وزیراعلیٰ کے نام پر اتفاق کے لیے ایک دن رہ گیا، اگر کل تک کسی نام پر اتفاق نہ ہوا تو معاملہ پارلیمانی کمیٹی کے پاس چلا جائے گا، بلوچستان اسمبلی کی مدت بھی کل مکمل ہورہی ہے جس کے بعد کل رات 12 بجے اسمبلی تحلیل ہوجائے گی۔
خیبرپختونخوا میں نگراں وزیراعلیٰ کے لیے منظور آفریدی کا نام سامنا آیا تاہم اپوزیشن کی شدید تنقید کے بعد اسے واپس لے لیا گیا،نگران وزیر اعلیٰ خیبر پی کے منظورآفریدی ہی ہونگے یا کوئی اور؟ ابھی تک صورتحال مشکوک ہے۔

اظہر تھراج

صحافی اور کالم نگار ہیں،مختلف اخبارات ،ٹی وی چینلز میں کام کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں