اسلام آباد ہائیکورٹ نے مزید4 اضلاع کی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دیا

اسلام آباد ہائیکورٹ نے مزید4 اضلاع کی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دیا


 24نیوز: اسلام آباد ہائیکورٹ نے 40 سے زائد درخواستوں پر سماعت کرتے ہوئے فیصلہ سنایا۔ حلقہ بندیوں کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں 108 درخواستیں زیرسماعت ہیں، جن میں ضلع خاران، گھوٹکی، قصور اور شیخوپورہ کی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دیا گیا۔

   حلقہ بندیوں کے حوالے سے مختلف درخواستوں پر سماعت کی گئی۔ اسلام آباد ہائی کورٹ میں سماعت کے لیے پیش کی جانے والی درخواستوں پر سماعت کرتے ہوئے آٹھ اضلاع کی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دے دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:ملک بھر کے 8 اضلاع کی حلقہ بندیاں کالعدم قرار

 بہاولپور، رحیم یار خان، جھنگ، جہلم، چکوال، ٹوبہ ٹیک سنگھ، لوئر دیر اور بٹگرام کی حلقہ بندیاں کالعدم قرار دی گئی ہیں۔ عدالت کی جانب سےریمارکس میں کہا گیا کہ نئی حلقہ بندیاں کرتے ہوئے ہر نشست پر آبادی کا تناسب مدنظر رکھا جائے۔

پڑھنا نہ بھولیں:ایران پاکستان گیس منصوبہ عالمی پابندیوں کے باعث التوا کا شکار ہے: وزیر اعظم

 اسلام آباد ہائیکورٹ نے 9 اضلاع کی حلقہ بندیوں کے خلاف دائر درخواستیں مسترد کردیں جن میں خانیوال، چنیوٹ، کرم ایجنسی، راجن پور، مانسہرہ، صوابی، جیکب آباد، گوجرانوالہ اور عمر کوٹ کی حلقہ بندیوں کے خلاف درخواستیں مسترد کی گئی ہیں۔