انتخابی اصلاحات بل: عدالت نے الیکشن کمیشن کا نوٹس معطل کر دیا

انتخابی اصلاحات بل: عدالت نے الیکشن کمیشن کا نوٹس معطل کر دیا


اسلام آباد (24نیوز) اسلام آباد ہائیکورٹ انتخابی اصلاحات بل 2017 کی دفعات 202 اور 204 عدالت میں چیلنج کرنے کا معاملہ ، عدالت نے الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کیا گیا نوٹس معطل کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کئے گئے نوٹس میں الیکشن ایکٹ 2017 کی شق 202 کے تحت سیاسی پارٹیوں کو دو لاکھ روپے جمع کرانے کی ہدایت کی گئی تھی ، عدالت نے الیکشن کمیشن سمیت دیگر فریقین کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔

جسٹس عامر فاروق نےکیس کی سماعت کی ایڈووکیٹ حافظ محمد سفیان اور چوہدری حامد سیاسی جماعتوں کی جانب سے پیش ہوئےچار سیاسی جماعتوں نے بل کی دفعات اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کیں نئے بل کے تحت سیاسی جماعتوں کےلئے دو لاکھ روپے جمع کرانا لازمی ہےاس کے علاوہ 2 ہزار سے زائد ممبران کے شناختی کارڈز کی کاپی دستخط کیساتھ جمع کرانا بھی لازم ہےوکیل درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ بل میں شامل یہ دفعات آئین پاکستان اور بنیادی انسانی حقوق کے متصادم ہے، عدالت نے سماعت 9 جنوری تک ملتوی کردی.