انتظامیہ کی غفلت یا موسمی اثرات، لاہور چڑیا گھر میں افریقی چیتا مر گیا

انتظامیہ کی غفلت یا موسمی اثرات، لاہور چڑیا گھر میں افریقی چیتا مر گیا


لاہور (24 نیوز): انتظامیہ کی غفلت یا موسمی اثرات، لاہور چڑیا گھر میں جانوروں کی ہلاکتیں جاری، چڑیا گھر میں 79 لاکھ 85 ہزار روپے کی لاگت سے لایا جانے والاچیتا ہلاک ہوگیا۔

چڑیا گھر میں ایک ماہ قبل سائوتھ افریقہ سے لایا گیا چیتے کا جوڑا ویران پنجرے کی رونق بنا لیکن پنجرہ زیادہ دیر اپنے مکینوں کو آباد نہ رکھ سکا اور ایک ہفتہ بعد ہی چیتے کو موت نے گھیر لیا۔ مادہ کیا مری، نر کو بھی بیماریوں نے جکڑ لیا۔ مادہ کی موت کے تین ہفتے بعد ہی نر بھی ہلاک ہوگیا۔

لاہور چڑیا گھر کے ڈائریکٹر حسن علی سکھیرا کا کہنا ہے کہ نر چیتا ڈائریا کے باعث ہلاک ہو ا، یہ جانورانتہائی دیکھ بھال میں رکھا گیا تھا، مرنیوالے نر چیتا کی لاش پوسٹ مارٹم کے لئے بھجوا دی گئی ہے تاکہ اصل حقائق معلوم ہو سکیں۔

ہلاک ہونے والے نر چیتے کی عمر چار ماہ تھی اور ایک ماہ قبل ہی اسے زو ماڈرنائزیشن اینڈ ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کے تحت لاہور چڑیا گھر لایا گیا تھا۔