وزیراعلیٰ سندھ نے محکمہ ورکس اینڈ سروسز کی اسکیموں کا جائزہ لیا


 کراچی(24نیوز): وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے ترقیاتی کاموں کے حوالے سے متعلقہ اداروں کو ٹھیک کرنے کے لئے کمر کس لی، انہوں نے کہا کہ اب کسی کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی، وہ خود تعمیراتی کاموں کا جائزہ لیں گے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے چیئرمین پی اینڈ ڈی کی سربراہی میں کمیٹی قائم کردی ہے، وزیرِ اعلیٰ سندھ کو بریفنگ دی گئی کہ متعلقہ کمیٹی ، کام کی رفتار اور معیار کا جائزے سمیت فنڈز کا اجرا کرے گی۔ وزیرِ اعلیٰ سندھ نے حکم دیا کہ کسی کی بھی کوتاہی ہو اس کے خلاف کارروائی ہوگی۔ وزیرِاعلیٰ سندھ نے کہا کہ صوبے کے دیہی علاقوں کی تعمیر پر خصوصی توجہ دے رہا ہوں، سندھ حکومت نے سڑکوں کی مرمتی اور بحالی کے کام  کے لیے 3.4 بلین روپے مختص کیے ہیں۔ دوسری جانب سندھ حکومت نے فیصل فاروقی کو گورنر ہاؤس میں آفسر تعلقات عامہ تعینات کردیا۔

فیصل فاروقی محکمہ اطلاعات کے ڈپٹی ڈائریکٹر کے عہدے پر تعینات تھے۔ ایک اور اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے محکمہ ورکس اینڈ سروسز کی اسکیموں کا جائزہ لیا۔ وزیرِاعلیٰ سندھ کو بریفنگ دی گئی کہ ہائی وے کی کل 488 اسکیمز بشمول 92 نئی ہیں جن کی مالیت 25772 ملین روپے ہے۔ شہید بینظیرآباد میں ریلوے لائن کے اوپر 252.8 ملین روپے کی لاگت سے برج مکمل ہوگیا ہے۔ باقی کچھ اضافی کام ہے وہ بھی جلد مکمل کیا جائے گا۔