فواد چودھری کو چپ لگ گئی



اسلام آباد( 24نیوز ) ڈالر کی اڑان نے کبھی چپ نہ کرنے والے وزیر اطلاعات فواد چودھری کو بھی خاموش کرا دیا،وزیراطلاعات فواد چودھری کا ڈالر ریٹ میں اضافے پر جواب دینے سے گریز کیا،صحافیوں کی جانب سے بار بار پوچھنے پر بھیفواد چودھری نے جواب نہ دیا۔

ادھر انہوں نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ امن کے لیے راستے کھولنے چاہئیں،بھارت پاکستان میں دہشت گردی کی پشت پناہی کرتا ہے،کشمیرمیں پاکستان کی بہت زیادہ حمایت ہے۔

اسلام آباد میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ مسئلہ کشمیر ایک علاقے کا مسئلہ نہیں، ہم کشمیر اس لیے نہیں چاہتے کہ وہ بہت خوبصورت اور جنت نظیر ہے، ہم کشمیر کا معاملہ زمین کی نظر سے نہیں بلکہ انسانیت کی نظر سے دیکھتے ہیں، وہاں کے بسنے والے ہمارے جسم کا حصہ ہیں، ان کی تکلیف سے ہم تکلیف میں جاتے ہیں، کشمیر پر ہم تین جنگیں لڑچکے ہیں۔

ضرور پڑھیں:انکشاف 16 جون 2019

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں انڈین اسپانسر دہشتگردی ہے کیونکہ بھارت کشمیر پر اپنا تسلط رکھنا چاہتا ہے، ایک وقت تھا جب بھارت نے کشمیر پر قبضہ کر رکھا تھا لیکن اب کشمیر کے بیانیے نے پورے بھارت پر قبضہ کیا ہوا ہے۔

وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ کشمیر کے مظالم دیکھ کر بھارت سے تعلقات کا راستہ کٹھن ہوجاتا ہے، کشمیر کے معاملے پر بھارت کو حقیقت پسندانہ رویہ اپنانا ہوگا، ہندوستان کی پالیسی میکنگ میں بے وقوف لوگ ہوں گے جو سمجھتے ہوں گے کہ کشمیر کا معاملہ صرف پاکستان کی وجہ سے چل رہا ہے، کشمیریوں کے اندر کے جذبات ہیں، کشمیریوں کی جدوجہد وہاں کے لاکھوں لوگ خود ہیں۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ مودی نے کشمیر کو بلین آف ڈالر کے پیکیج کا کہا، آزادی پیسے سے نہیں خریدی جاتی، آزادی کشمیریوں کے اندر من کا جذبہ ہے، اگر من راضی نہیں تو کچھ نہیں کرسکتے, کشیدگی کے باعث سارک کا اجلاس متاثر ہورہاہے، امن ہوگا تو سب کو فائدہ ہوگا، خطے کا مفاد ہے کہ بھارت پاکستان کے تعلقات بہتر ہوں۔

یاد رہے ڈالر سستا ہونے کی بجائے اوپن مارکیٹ میں مزید مہنگا ہو گیا، ڈالر میں آٹھ روپے اضافے کے ساتھ قیمت 142روپے ہوگئی ہے، ڈالر کی قیمت میں بڑے اضافے سے تمام روزمرہ کی اشیاءمہنگی ہونے کا امکان ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer