اپوزیشن کو شکست،اقتدار پارٹی جیت گئی

اپوزیشن کو شکست،اقتدار پارٹی جیت گئی


ڈھاکہ( 24نیوز ) بنگلہ دیش کے الیکشن کمیشن نے شیخ حسینہ واجد کو فاتح قرار دے دیا ہے تاہم حزب اختلاف نے انتخابات کو مضحکہ خیز اور دھاندلی زدہ قرار دیتے ہوئے ان کی مذمت کی ہے اور ساتھ ہی نئے انتخابات کا مطالبہ کیا ہے۔

شیخ حسینہ کی جماعت نے اب تک آنے والے نتائج کے مطابق 350 نشستوں کے ایوان میں سے 281 نشستیں جیت لی ہیںو جب کہ حزبِ اختلاف کے حصے میں صرف سات نشستیں آئی ہیں،تاہم بڑے پیمانے پر دھاندلی کے الزامات لگائے جا رہے ہیں ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق حزبِ اختلاف کے رہنما کمال حسین نے کہاہم الیکشن کمیشن سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ان مضحکہ خیز نتائج کو فوری طور پر کالعدم قرار دے،ہم ایک غیر جانب دار حکومت کے زیرِ اہتمام نئے انتخابات کا مطالبہ کرتے ہیں۔

ضرور پڑھیں:انکشاف، 24 اگست2019

قبل ازیں کشیدگی اور تناﺅ کے درمیان ووٹنگ ہوئی، بی این پی، عوامی لیگ کے کارکنوں میں جھڑپوں اور پولیس فائرنگ سے17 افراد ہلاک اور 20 زخمی ہوگئے۔ ووٹنگ کے دوران حکومت نے پروپیگنڈے روکنے کے نام پر انٹرنیٹ سروس بند کردی ہے، کئی شہروں میں موبائل سروس بھی بند رہی، الیکشن سے قبل چٹاگانگ شہر میں بھرے ہوئے بیلٹ باکس دیکھے ہیں،مرنیوالوں کا زیادہ تر کا تعلق اپوزیشن جماعتوں سے ہے۔

واضح رہے شیخ حسینہ واجد پاکستان مخالف رہنما شیخ مجیب الرحمن کی بیٹی ہیں،سابقہ دور حکومت میں انہوں نے پاکستان سے محبت کے جرم میں کئی اپوزیشن رہنماﺅں کو پھانسی چڑھایا تو کچھ قید کی سزائیں سنائی گئیں۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer