انتخابات کے باوجود پاکستان میں مکمل جمہوریت نہ آسکی

انتخابات کے باوجود پاکستان میں مکمل جمہوریت نہ آسکی


اسلام آباد(24نیوز) پاکستان میں انتحابات تو ہوتے ہیں لیکن ابھی مکمل جمہوریت نہیں آ سکی، عالمی ڈیموکریسی انڈیکس میں پاکستان کا 110 واں نمبر ہے، گزشتہ 4 سال کے دوران پاکستان کی رینکنگ تو بہتر ہو گئی لیکن جمہوری سکور پہلے سے کم ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق دی اکانومسٹ انٹیلی جنس یونٹ کی طرف سے جاری کردہ 2017 کے ڈیموکریسی انڈیکس میں پاکستان کی رینکنگ 4.26 سکور کے ساتھ 110 رہی۔ 2016 کے انڈیکس میں پاکستان کی رینکنگ 111 تھی۔ انڈیکس میں ناروے، آئس لینڈ،اور سویڈن بدستور پہلے دوسرے اور تیسرے نمبر پر رہے۔ بھارت 42 ویں اور بنگلہ دیش 92 ویں نمبر پر ہے۔ عالمی ڈیموکریسی انڈیکس کسی بھی ملک میں سیاسی کلچر، انتخابی نظام،حکومت کی ورکنگ اور شہری آزادیوں کے پیمانے پر مرتب کیا جاتا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کے انتخابی نظام میں تو 10 میں سے 6.5 نمبر ہیں۔ تاہم سیاسی شمولیت اور سیاسی کلچر میں صرف 2.2 نمبر ہیں۔ رپورٹ کے مطابق انڈیکس میں مجموعی طور پر پاکستان کا سب سے زیادہ 4.64 سکور 2013 اور 2014 میں تھا۔ جو 2017 تک بتدریج کم ہوتے ہوتے 4.26 تک آ گیا۔ 1 سال کے دوران انڈیکس میں بھارت کی ریکنگ میں 10 درجے کی کمی ہوئی۔