کے پی کے حکومت، روس کے مابین آئل ریفائننگ معاہدہ، وفاقی حکومت رکاوٹیں ڈال رہی: عمران


پشاور(24نیوز) چیئرمینتحریک انصاف عمران خان نےکہا  ہےکہ ہم پانی سے بجلی بنانا چاہتے ہیں،وفاقی حکومت رکاوٹیں ڈال رہی ہے۔ چار ہزار میگا واٹ بجلی کے منصوے وفاقی حکومت کی جانب سے این او سی نہ ملنے کے باعث زیر التواء ہیں۔
خیبر پختونخواہ حکومت اور روس کے مابین آئل ریفائننگ کے شعبہ میں معاہدہ طے پا گیا۔معاہدے کے تحت روسی کمپنی خیبر پختونخواہ میں پینتیس ارب روپے کی لاگت سے بیس ہزار گیلن تیل صاف کرنے کی ریفائنری قائم کرے گی،مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کی تقریب کے بعد میڈیا سے گفتگو میں عمران خان نے کہا کہ خیبر پختونخواہ حکومت پانی سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبے شروع کر رہی ہےمگر وفاقی حکومت رکاوٹیں ڈال رہی ہے۔

وزیر اعلٰی خیبر پختونخواہ پرویز خٹک نے کہا کہ صوبائی حکومت عوامی فلاح وبہود کے منصوبوں پر گامزن ہے۔صوبائی وزیر توانائی عاطف خان نے کہا کہ وفاقی حکومت خیبر پختونخواہ سے ایک روپے چار پیسے فی یونٹ کے حساب سے بجلی خرید کر نو روپے فی یونٹ کے حساب سے فروخت کر رہی ہے۔

مزید دیکھیں: