نواز شریف،مریم نواز کی ضمانت ہوجائے گی؟


اسلام آباد( 24نیوز ) ایون فیلڈ ریفرنس میں قید کی سزا پانے والے سابق وزیراعظم نواز شریف ، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) محمد صفدر کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت آج ہوگی،اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس گل حسن اورنگزیب ضمانت کی درخواستوں پر سماعت کریں گے جب کہ عدالت نے گزشتہ سماعت پر تمام اپیلوں پر نیب کو نوٹس جاری کر کے جواب طلب کیا تھا۔
احتساب عدالت سے سزا پانے والے تینوں مجرموں نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں ضمانت کی الگ الگ درخواستیں دائر کی ہیں،ہائیکورٹ نے درخواستیں منظور کیے جانے کے بعد اپنے تحریری حکم نامے میں قرار دیا تھا کہ وکلا صفائی کے اٹھائے گئے نکات زیربحث لانے کی ضرورت ہے۔
سابق وزیراعظم نواز شریف ناساز طبیعت کے باعث ڈاکٹروں کے مشورے سے پمز اسپتال اسلام آباد میں زیرعلاج ہیں جب کہ مریم نواز اور کیپٹن (ر) محمد صفدر اڈیالہ جیل میں قید ہیں۔

 یہ بھی پڑھیں:  نواز شریف اڈیالہ جیل سے پمز منتقل
یاد رہے کہ احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے 6 جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے نواز شریف کو مجموعی طور پر 11، مریم نواز کو 8 اور کیپٹن (ر) محمد صفدر کو ایک سال قید کی سزا سنائی تھی۔،سابق وزیراعظم اپنی صاحبزادی کے ہمراہ 13 جولائی کو وطن واپس لوٹے تو دونو کو طیارے سے ہی گرفتار کرتے ہوئے اڈیالہ جیل منتقل کردیا گیا تھا۔
دوسری طرف نوازشریف کی میڈیکل رپورٹس آگئیں،خون اوریورین ٹیسٹ نارمل آئے،کولیسٹرول کی مقدار زیادہ اورمکسڈ بلڈ سیلزمیں معمولی انفیکشن پایا گیا،سابق وزیراعظم کوراولپنڈی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی منتقل کئے جانے کا امکان ہے۔

 یہ بھی پڑھیں:  عمران خان کا خواب ٹوٹ جائیگا؟

خیال رہے کہ سلمان،حمزہ،پرویزرشید،مشاہدحسین اورڈاکٹرعدنان نے نواز شریف سے ملاقات کی ہے،ادھر پارٹی ارکانے حسین نوازکوقائد کی خاطرہر قربانی کی یقین دہانی کرائی ہے،حسین نواز جلد مختلف ممالک کے سفارتکاروں سے ملاقاتیں کریں گے،نوازشریف اوربیگم کلثوم نوازکی میڈیکل رپورٹس بارے سفارتکاروں کو بتائیں گے،عام انتخابات میں دھاندلی کے ثبوت بھی سفارتکاروں کے سامنے رکھیں گے۔