حکومتی کارکردگی پروزیراعظم کا قومی اسمبلی اجلاس میں آخری خطاب


اسلام آباد( 24نیوز )وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ہمیشہ اتفاق رائے پیدا کرنے کی کوشش کی ،کراچی میں امن قائم ہوا،ملک سے لوڈشیڈنگ ختم کی گئی۔جولائی کے آخر میں انتخابات ہونے ہیں جن میں ایک دن کی بھی تاخیر برداشت نہیں کی جائے گی-

قومی اسمبلی کے آخری اجلاس کے دوران پارلیمنٹ ہاؤس میں خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہآج بجلی کے بحران پر قابوپالیا گیا ہے۔ آئندہ پندرہ سال میں بجلی کی کمی نہیں ہوگی۔ آج پاکستان میں لوگ سرمایہ کاری کررہے ہیں۔ صاف شفاف انتخابات ہماری ضرورت ہے۔

 یہ بھی پڑھیں:   سپریم کورٹ کا شہبازشریف، رانا ثناء اور دیگر سے اضافی گاڑیاں واپس لینے کا حکم

انھوں نے کہا کہ جناب اسپیکر آپ کا مشکور ہوں جس طرح آپ نے ہاؤس چلایا۔ خورشید شاہ کا مشکورہوں۔ صاف شفاف انتخابات ہماری ضرورت ہیں۔گزشتہ پانچ سالوں کے دوران جمہوریت پر پے در پے حملے ہوئے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہمیں درآمدات کوبڑھانا ہو گا۔ سی پیک کی وجہ سے ملک میں خوشحالی آئے گی۔ کشمیرکا مسئلہ ہم نے ہرفورم پہ اٹھایا۔ ہم نے ملک کی خارجہ پالیسی پرحرف نہیں آنے دیا۔ ملک میں پہلی بار کوئلہ کے منصوبے ہم لے کر آئے۔

 پڑھنا نہ بھولیں:العزیزیہ مل کے مالک نواز شریف نہیں ہیں، جے آئی ٹی سربراہ 

واضح رہے کہ  یہموجودہ حکومت کے دور کا قومی اسمبلی کا آخری اجلاس تھا۔ جس میں پارلیمانی رہنماؤں کو شیلڈز پیش کی گئیں۔ ایوان میں وزراء اور حکومتی ارکان سمیت اپوزیشن اراکان کی بھی بڑی تعداد موجود رہی۔

ایوان میں اظہار خیال کے دوران وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے تعاون کرنے پر اپوزیشن لیڈر سمیت تمام اراکین کا شکریہ ادا کیا۔ یہ بھی واضح رہے کہ پیپلز پارٹی کے بعد مسلم لیگ ن کو 5 سالہ آئینی مدت مکمل کرنے کا اعزاز حاصل ہے۔ 

اظہر تھراج

صحافی اور کالم نگار ہیں،مختلف اخبارات ،ٹی وی چینلز میں کام کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں