پاکستان کا ایف اے ٹی ایف گرے لسٹ میں شامل ہونا امریکی دباؤ کا نتیجہ ہے:خرم دستگیر

پاکستان کا ایف اے ٹی ایف گرے لسٹ میں شامل ہونا امریکی دباؤ کا نتیجہ ہے:خرم دستگیر


اسلام آباد(24نیوز) وزیرخارجہ خرم دستگیرکہتے ہیں کہ افغانستان میں امریکی افواج کے باوجود داعش کا بڑھتا ہوا اثرورسوخ پر تحفظات ہیں، پاکستان کا ایف اے ٹی ایف گرے لسٹ میں شامل ہونا امریکی دباؤ کا نتیجہ ہے، امریکہ افغانستان میں ناکامیوں کا ملبہ پاکستان پر ڈال رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سفارتی محاذ پر 5 سالہ ن لیگی حکومتی کارکردگی پروزیرخارجہ خرم دستگیر نے نیوز کانفرس میں مختلف کامیابیوں کے خدوخال بیان کئے۔ پاکستان نے دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکا۔ چینی صدر سمیت 10 سربراہان مملکت نے 5 سالوں میں پاکستان کے دورے کیے۔ چین، وسطی ایشیائی ممالک کے ساتھ تعلقات کافی بہتری ہوئے تاہم بھارت کے کشیدگی میں کافی اضافہ ہوا۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارت کے ساتھ سفارتی سطح پر بات چیت مکمل طور پر بند ہے تاہم دونوں افواج آپس میں رابطے میں ہیں۔

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ امریکہ ایک ٹریلین ڈالر خرچ کرکے بھی افغان جنگ ہارچکا ہے جس کی ذمہ داری وہ پاکستان پر ڈال رہا ہے۔ ٹرمپ انتظامیہ کے آتے ہی امریکیوں سے مکالمہ نہ ہونے کے برابر رہ گیا ہے۔ امریکی دباؤ پر پاکستان کا نام فنانشنل ایکشن ٹاسک فورس کی گرے لسٹ میں شامل کیا گیا۔ افغانستان میں داعش کے بڑھتے ہوئے اثرورسوخ پر شدید تحفظات ہیں۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:العزیزیہ مل کے مالک نواز شریف نہیں ہیں، جے آئی ٹی سربراہ 

 خرم دستگیر کا مزید کہنا تھا کہ افغانستان کا افغان عوام کے زریعہ افغانوں کے ہاتھوں حل چاہتے ہیں۔ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں بہتری آرہی ہے۔ برہان وانی کی شہادت نے کشمیریوں کی جدوجہد کو نئی جہت دی۔ بھارت مقبوضہ کشمیر میں مظالم چھپانے کے لئے ایل اوسی اور ورکنگ باؤنڈری پر جنگ معاہدے کی خلاف ورزیاں کررہا ہے۔