آسٹریلیا کے کروڑ پتی مسلمان نے  ساری دولت انسانیت کی خدمت کیلئےدے دی


24نیوز: آسٹریلیا کے کروڑ پتی مسلمان نوجوان نےاپنی ساری دولت انسانیت کی خدمت کے لیے دے دی۔ سڈنی کے رہائشی علی بانات کو تین سال پہلے کینسر کا مرض تشخیص ہوا تھا۔ جس کے بعد اس نے خود کو انسانیت کی بھلائی کے لئے وقف کردیا۔

 تفصیلات کے مطابق آسٹریلیا کے کروڑ پتی مسلمان نوجوان نےاپنی ساری دولت انسانیت کی خدمت کے لئے دے دی۔ سڈنی کے رہائشی علی بانات کو تین سال پہلے کینسر کا مرض تشخیص ہوا تھا۔ جس کے بعد اس نے خود کو انسانیت کی بھلائی کے لئے وقف کردیا۔

یہ بھی پڑھیں:کینسر اور قید سے لڑتے لڑتے پاکستانی انڈونیشیا میں جان کی بازی ہار گیا

 گزشتہ ہفتے علی کا انتقال ہوگیا۔ اس کے بنائے ہوئے ٹرسٹ مسلم اراؤنڈ دی ورلڈ میں ایک کروڑ ڈالر سے زائد رقم موجود ہے۔ یہ ٹرسٹ افریقی ملکوں ٹوگو، گھانا اور دیگر ممالک میں 200 سے زائد بیواؤں کو گھر بنا کر دے چکا ہے۔ اس ٹرسٹ نےمسجد سکول اور یتیموں کے لئے شیلٹر ہوم، ہسپتال بھی بنائے ہیں۔

علی کا بنایا گیا ٹرسٹ دکھی انسانیت کی خدمت کررہا ہے، مسجد، اسکول، یتیموں کے لئے شیلٹر ہوم بھی بنائے۔