حکومت کوعارضی ریلیف مل گیا، اپوزیشن کا احتجاجی تحریک نہ چلانےکا فیصلہ

حکومت کوعارضی ریلیف مل گیا، اپوزیشن کا احتجاجی تحریک نہ چلانےکا فیصلہ


اسلام آباد (24 نیوز) پیپلزپارٹی اور ن لیگ حکومت کے خلاف فوری احتجاجی تحریک نہ چلانے پر متفق ہو گئیں، جس کے بعد مولانا فضل الرحمان کی احتجاج کے لیے آل پارٹیز کانفرنس بلانے کی خواہش مخدوش ہونے لگی ہے۔

 حکومت کوعارضی ریلیف مل گیا، اپوزیشن کی دونوں بڑی جماعتیں حکومت کی نااہلیاں بےنقاب ہونےکاانتظارکریں گی۔ پیپلزپارٹی اورن لیگ کی ہم آہنگی پرمولانا فضل الرحمان کی حکومت کیخلاف آل پارٹیز کانفرنس بلانے کی خواہش دم توڑنےلگی۔ پیپلز پارٹی کاکہناہے پی ٹی آئی قیادت مکمل نااہل ہے، اسے بے نقاب ہونے دیا جائے، اگر فوری کسی قسم کا احتجاج کیا تو عوام میں اپوزیشن کا منفی تاثر جائے گا، حکومت کے خلاف چھ ماہ بعد پارلیمنٹ کے باہر احتجاج کیا جانا چاہیے۔

دوسری جانب پیپلزپارٹی کی تجویزن لیگ کےدل کو بھا گئی اورمیاں نواز شریف اور شہباز شریف نے پیپلزپارٹی کی تجویز پر نیم رضا مندی ظاہر کر دی ۔ ذرائع کا کہناہے  کہ پیپلزپارٹی اورمسلم لیگ ن کےمتفق ہونےکے بعدبھی اگرمولانافضل الرحمان نے آل پارٹیزکانفرنس بلائی توکانفرنس میں دونوں جماعتوں کے مرکزی قائدین شریک نہیں ہوں گے۔