تحریکِ انصاف کی حکومت کی عوام سے ناانصافی

تحریکِ انصاف کی حکومت کی عوام سے ناانصافی


تحریک انصاف کی حکومت نےبھی عوام کے ساتھ انصاف نہیں کیا۔ خریدارسے جتناسستا تیل لیا، عوام کو اتنا سستا دینے کی بجائے 11 ارب روپے اپنی جیب میں ڈالنے کے لیے ٹیکس بڑھادیا، یہ ہم نہیں کہتے،حکومتی ادارے بھی کہہ رہے ہیں۔

عالمی مارکیٹ میں گزشتہ ماہ کے دوران تیل کی قیمت میں 12 فیصد سے زیادہ کی کمی ریکارڈ کی گئی تاہم حکومت نے ڈیزل 3.8 فیصد اور پیٹرول 5 فیصد ہی سستا کیا. تاہم حکومت نے جس شرح سے پٹرولیم مصنوعات پر ٹیکس بڑھایا ہے اس کے مطابق ٹیکس نہ بڑھانے کی صورت میں پٹرول کی قیمت میں 4 روپے 86 پیسے کی بجاے 13 روپے فی لیٹر، ڈیزل کی قیمت میں سوا چار روپے کی بجائے ساڑھے آٹھ روپے فی لیٹر کی کمی ہونی چائیے تھی۔

لائٹ ڈیزل 2 روپے 15 پیسے کی بجائے ساڑھے 13 روپے اور مٹی کا تیل سوا 14 روپے فی لیٹر سستا ہو سکتا تھا لیکن حکومت نے عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کا پورا فائدہ عوام کو دینے کی بجائے زیادہ فائدہ خود لے لیا۔ پٹرولیم مصنوعات کی اوسط ماہانہ کھپت کے مطابق حکومت ٹیکس نا بڑھاتی تو جنوری کے دوران عوام کا 11 ارب روپے سے زیادہ کی بچت ہوتی جو اب حکمرانوں کے اخراجات پورے کرنے کے لیے استعمال ہوں گے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔