پسند کی شادی کرنے کی انوکھی اور بھیانک سزا

پسند کی شادی کرنے کی انوکھی اور بھیانک سزا


چھانگا مانگا (24نیوز) معمر میاں بیوی پرظلم کی انتہا کردی گئی، بیٹے کی پسند کی شادی کی قیمت والدین کو چُکانا پڑ گئی، لڑکی کے گھروالوں نے تشددکا نشانہ بنا ڈالا۔

 پتوکی کےمعمر  اسکول ٹیچراوراس کی بیوی پر ظلم کے پہاڑتوڑ دیئے گئے۔ بیٹے کے سسرال والوں نے برہنہ کرکے تشدد کا نشانہ بنایا، گلے میں رسی ڈال کرسڑک پر گھسیٹتے رہے۔ اسکول ٹیچر سرور سلیم کا کا کہنا ہے اس قدرماراپیٹا گیا کہ اس کا بازوبھی ٹوٹ گیا، سرور کی جیون ساتھی نے ظلم سہنے میں بھی ساتھ دیا، اس کا کہنا ہے انہیں بیٹے کی پسند کی شادی کی سزا دی گئی۔ب

ے بس میاں بیوی رو رو کر وزیراعظم،وزیراعلیٰ اورچیف جسٹس سے انصاف کی بھیک مانگتے رہے، لیکن پولیس ہے کہ وہ اپنی روایت پرقائم ہے، مظللوموں کو انصاف دلانے کے بجائے پولیس ملزموں کی پشت پناہی کررہی ہے۔
واضح رہے کہ سرورسلیم کے بیٹے اختر رسول نے دو سال قبل پسند کی شادی کی تھی،جس کے رنج میں لڑکی کے گھروالوں نے دھاوا بولا۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔