چھوٹے دکاندار بھی ایف بی آر کے ریڈار پر آگئے

چھوٹے دکاندار بھی ایف بی آر کے ریڈار پر آگئے


اسلام آباد ( 24 نیوز ) ایف بی آرنے تاجروں سے ٹیکس جمع کرنے کیلئے آسان اورسادہ اسکیمیں تیارکرلیں۔

ایف آبی آر نے تاجروں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کیلے اسکیموں کا مسودہ جاری کردیا۔ ایف بی آر نےبڑے تاجروں کے لیے بزنس لائسنس جبکہ چھوٹے دکانداروں کے لیے فکسڈ ٹیکس اسکیم متعارف کرایا ہے۔ ان سیکموں کا مقصد دکانداروں کے لیے ٹیکس کی ادائیگی کو سادہ اور آسان بنانا ہے، اسیکم کے تحت تاجر 2019 کے ٹیکس ریٹرن مجوزہ اسکیم کے تحت جمع کرانے ہوں گے۔یہ اسکیم 5 کروڑ سالانہ ٹرن اوور والے تاجروں کے لیے ہوگی،پانچ کروڑ روپے کی سرمایہ کاری اور10 کروڑ روپے کے اثاثہ جات رکھنے والے تاجر بھی اسکیم سے فائدہ اٹھا سکیں گے۔

اسکیم کے تحت تاجروں کو سالانہ 10 فیصد اضافی آمدن ظاہر کرنا ہوگی، اسکیم کے تحت تاجر گذشتہ پانچ سال کے ٹیکس ریٹرنز بھی جمع کرا سکتے ہیں، تمام تاجروں کو 30 ستمبر 2019 تک اپنے ریٹرن جمع کرانے ہوں گے۔ اسکیم کے تحت تاجروں کو ود ہولڈنگ ایجنٹ نہیں بننا پڑے گا۔

چھوٹے تاجروں کیلئے جاری اسیکم کے تحت 300مربع فٹ کی دکان میں کاروبار کرنے والا چھوٹا دکاندار تصور ہوگا،ان دکانداروں پر 2 فیصد ٹرن اوور ٹیکس لاگو ہوگا، ایف بی آر نے چھوٹے دکانداروں کیلئے فکسڈ ٹیکس کا آپشن بھی دیا ہے، چھوٹے دکاندار 2019 میں 20 ہزار , 25 ہزار , 35 ہزار اور 40 ہزار کا فکسڈ ٹیکس ادا کرسکتے ہیں، چھوٹے دکاندار 2020 میں 25 ہزار , 35 ہزار , 40 ہزار اور 50 ہزار کا فکسڈ ٹیکس ادا کرسکیں گے۔