میر ہزار بجارانی،اہلیہ کی پر اسرار ہلاکت،نماز جنازہ آج کشمور میں ہوگی


کراچی(24نیوز)پولیس کا دعویٰ ہے کہ ابتدائی تحقیقات کے بعد حاصل شواہد اور پوسٹ مارٹم رپورٹ سے معلوم ہوتا ہے کہ صوبائی وزیر برائے پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ میر ہزار خان بجارانی نے پہلے اہلیہ کو قتل کیا اور پھر خودکشی کی۔
میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی پراسرار موت کی ابتدائی تحقیقات کے حوالے سے ڈی آئی جی ساؤتھ آزاد خان کی جانب سے پریس ریلیز جاری کردی گئی، جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ 'میاں بیوی کے درمیان کچھ دنوں سے جھگڑا چل رہا تھا'۔
ڈی آئی جی ساؤتھ کے مطابق 'لاشیں خیابان جانباز میں واقع بنگلے کے پہلی منزل پر واقع اسٹڈی روم میں پائی گئیں،پولیس موقع پر پہنچی اور جائے وقوعہ سے شواہد اکھٹے کرنا شروع کیے، فرانزک ٹیم نے فنگر پرنٹس اور دیگر تمام ثبوت اکھٹے کرلیے جبکہ کمرے میں موجود خون کے نمونے بھی محفوظ کرلیے گئے ہیں'۔
دوسری جانب گھر میں موجود سی سی ٹی وی کیمرے کا ڈی وی آر بھی قبضے میں لے لیا گیا۔
پولیس کا کہنا ہے کہ شواہد کے مطابق دونوں کی موت گولی لگنے سے واقع ہوئی، میر ہزار خان بجارانی کو سر میں ایک گولی اور فریحہ رزاق کو تین گولیاں (ایک گولی سر پر 2 پیٹ میں) لگی تھی'۔

ڈی آئی جی ساؤتھ کے مطابق، 'فائرنگ تیس بور پستول سے کی گئی تھی اور جائے وقوعہ سے چار خول اور دو گولیاں ملیں،صوبائی وزیر کے گھر پر تعینات دو پولیس گارڈز سمیت چھ ملازمین سے بیانات لیے گئے، جن کے مطابق دونوں میں کئی روز سے ناچاقی چل رہی تھی۔
ڈی آئی جی ساؤتھ کے مطابق 'وقوعہ کے وقت گھر اندر سے بند تھا اور واقعے کے بعد بچوں نے ملازمین کے ساتھ مل کر دروازہ توڑا،ان کا مزید کہنا تھا کہ واقعے کی تمام پہلوؤں سے تحقیقات کی جارہی ہیں۔
یاد رہے کہ گذشتہ روز صوبائی وزیر میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ فریحہ رزاق کی لاشیں ڈیفنس میں واقع ان کی رہائش گاہ سے ملی تھیں۔
صوبائی وزیر کے خاندانی ذرائع نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا تھا کہ میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی لاشیں ڈیفنس فیز 5 میں واقع ان کے گھر سے برآمد ہوئیں، جن پر گولیوں کے نشانات پائے گئے۔
پولیس حکام کے مطابق صوبائی وزیر اور ان کی اہلیہ کی لاشیں ان کے بیڈروم سے متصل اسٹڈی روم سے ملیں، میر ہزار خان بجارانی کی لاش صوفے پر تھی، انہیں انتہائی قریب سے سر میں گولی لگی ہوئی تھی جبکہ فریحہ رزاق کی لاش کچھ فٹ دور فرش پر پڑی تھی، دونوں افراد نائٹ ڈریس میں ہی تھے اور کسی مزاحمت کے شواہد نہیں ملے۔
واضح رہے کہ صوبائی وزیر برائے پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ میر ہزار خان بجارانی کی نماز جنازہ آج بعد نماز جمعہ کشمور کے علاقے کرم پور میں ادا کی جائے گی۔