عدلیہ تو بحال ہوگئی مگر عوام کو انصاف نہیں ملا: نواز شریف


کراچی (24نیوز) سابق وزیراعظم نے وکلا کی تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری عدلیہ تو بحال ہوگئی ہے مگر عوام کوپھر بھی انصاف نہیں ملا جبکہ وزیراعظم کا عہدہ بھی مفلوج ہوچکا ہے۔ منتخب نمائندوں کو رعایت نہیں ملی لیکن آمرکوہرقسم کی رعایت دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق نواز شریف کا یاسین آزاد ایڈووکیٹ کی مسلم لیگ ن میں 40 وکلا سمیت شمولیت کے حوالے سے منعقد کی گئی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ان کی اور 40 وکلا کی ن لیگ میں شمولیت ہمارے لئے باعث مسرت اوراعزاز ہے جبکہ بڑے وکلا کی ن لیگ میں شمولیت پارٹی کیلئے اثاثہ ثابت ہوں گے۔ وکلا کے کردار کوعزت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے کیونکہ وکلا انسانی معاشرے کا انتہائی اہم حصہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب حقوق اورفرائض کا توازن بگڑجائے توجرائم بڑھ جاتے ہیں، انصاف مہدب جمہوری معاشرے کا حسن ہوتا ہے۔ ہم عدلیہ بحالی میں کامیاب ہوگئے ،عدل کی تابناک صبح نہ ہوسکی اور نہ پاکستانی عوام کوانصاف مل سکا،گزشتہ سال تک مختلف عدالتوں میں 18لاکھ 59ہزارمقدمات زیرالتوا تھے اور آج بھی مقدمات کی بھاری تعداد مختلف عدالتوں میں ہے۔ عدلیہ کارویہ سیاستدانوں ،منتخب نمائندوں کے ساتھ اکثرسخت اورانصاف کے منافی جبکہ آمرہمیشہ عدلیہ کوعزیزرہے ہیں،منتخب نمائندوں کو رعایت نہیں ملی لیکن آمرکوہرقسم کی رعایت دی گئی ۔