قبضہ مافیا قائداعظم یونیورسٹی پرقابض، طلباء سراپا احتجاج

قبضہ مافیا قائداعظم یونیورسٹی پرقابض، طلباء سراپا احتجاج


اسلام آباد(24نیوز) ملک کی سب سے بڑی جامعہ قائداعظم یونیورسٹی بھی قبضہ مافیاکےچنگل سے نہ بچ سکی۔سرکارنے زمین واگزارنہ کروائی توطلبہ اور استاتذہ سڑکوں پرنکل آئے۔زمین واگزارکرانے کے لئے گرینڈ آپریشن کا مطالبہ کردیا۔

قبضہ مافیاکولگام نہ ڈالی جاسکی۔ قائداعظم یونیورسٹی کےاساتذہ اورطلبہ سراپااحتجاج بن گئے۔ملک کی بڑی یونیورسٹی کی سینکڑوں ایکڑاراضی پربااثر مافیا قابض ہے۔نیشنل پریس کلب اسلام آبادکےسامنے احتجاج کرتےہوئےمظاہرین کاایک ہی مطالبہ تھا کہ قبضہ مافیا سےعلم کی درس گاہ کوآزاد کروایاجائے۔

حکومت کی جانب سےتمام تر دعوؤں کے باوجود قائد اعظم یونیورسٹی کی 400 ایکڑسے زائد اراضی تاحال واگزار نہ کروائی جاسکی۔سروے آف پاکستان کی نشاندہی کے باوجود حکام نے بااثر مافیا کے سامنے آنکھیں بند کررکھی ہیں۔

اساتذہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران جب اپوزیشن میں تھے تو اس قبضہ کے خلاف آواز بلند کی تھی۔وزیراعظم عمران خان سے اپیل ہے کہ یونیورسٹی کی زمین واگزارکرانے کے لئے آپریشن کیا جائے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔