پردے کے پیچھے کی کہانی نہ رکی تو4سال کے راز عوام کو بتاؤں گا:نواز شریف

پردے کے پیچھے کی کہانی نہ رکی تو4سال کے راز عوام کو بتاؤں گا:نواز شریف


اسلام آباد (24نیوز) نوازشریف اپنے دورہ سعودی عرب سمیت ملکی سیاسی صورت حال پر وفاقی وزیروں کے ہمراہ پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ سب سے پہلے نئے سال کی مبارک باد پیش کرتا ہوں، نیا سال انتخابات کا سال بھی ہے،مزید کہا کہ پردے کے پیچھے کی کہانی نہ رکی تو4سال کے راز عوام کو بتاؤں گا۔

 پنجاب ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو میں میاں محمد نواز شریف نے کہا   کہ ٹرمپ کی طرف سے غیرسنجیدہ ٹوئیٹ کا جاری ہونا  انتہائی افسوسناک ہے، تاریخ میں ایک بھی وزیراعظم اپنی مدت پورہ نہ کرسکا،،انتخابات کے من پسندنتائج حاصل کرنے کی بھی کوشش کی گئی،انتخابات کے حوالے سے پاکستان کی تاریخ اچھی نہیں رہی،اسی خود فریبی نے پاکستان کو دولخت کیا،ہمیں خودفریبی کے اس فریب سے نجات حاصل کرنا ہوگی، ایسی باتوں پرمیری حب الوطنی پرسوال اٹھایا گیا،میری بات کو کبھی ڈان لیکس کبھی کچھ کہا گیا،سوچنا چاہئے کہ دنیا ہمارے لئے منفی سوچ کیوں رکھتی ہے،جمہوریت کو اصل شکل میں چلنے دیا جائے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں اپنے گھرکی خبرضرور رکھنی چاہئے،ہمیں پورے اخلاص کے ساتھ اپنے کردار کا جائزہ لینا چاہئے،3بار وزیراعظم رہا بہت سے حقائق میرے سامنے ہیں،وزیراعظم ایسی پالیسی بنائیں ہمیں امریکی امداد کی ضرورت نہ رہے،ہم17سال سے ایسی جنگ میں الجھیں ہیں جوہماری نہیں، ،کولیشن اسپورٹ فنڈ کوامداد یا خیرات کا نام نہ دیا جائے۔

نواز شریف نے مزید کہا کہ ہمیں امداد کے طعنے نہ دیئے جائیں نوازشریف،یہ نہ2001ہے نہ ڈکٹیٹرکی حکمرانی ہے،حکومتی سطح پرسفارتی آداب کا خیال رکھنا چاہئے،نائن الیون کے بعد سب سے بھاری قیمت پاکستان نے ادا کی۔

سابق وزیر اعظم نے مزید کہا کہ پردے کے پیچھے کہانی نہ رکی تو4سال کے راز عوام کو بتاؤں گا،میں بتاؤں گا کہ کیا کچھ ہونے جا رہا ہے،اگر یہ کارروائیاں نہ رکیں تو سارے ثبوت قوم کے سامنے رکھوں گا،کسی کو قوم پر مسلط کرنے کے منصوبے نہ بنائے جائیں،کسی لاڈلے کے لئے ہرروز نئی ڈیل یا ڈھیل تلاش نہ کی جائے، ،خفیہ کالز سے کسی کے راستے نہ باندھے جائیں،پاکستان کی تقدیرآزادانہ اور منصفانہ انتخابات سے جڑی ہے،آج پھرانتخابات کوانجینئرڈ کرنے کا منصوبہ بنایا جا رہا ہے۔

اہم خبر پڑھیں : نواز شریف اسلام آباد پنجاب ہاوس میں آج پریس کانفرنس کریں گے

واضح رہے کہ احتساب عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم نے کہا تھا کہ ان کا دورہ سعودی عرب کوئی عجوبہ نہیں تھا اور اس متعلق کی جانے والی قیاس آرائیاں کرنے والوں کا رویہ غیر ذمے دارانہ ہے۔

جاننے کیلئے مزید دیکھیں :