امریکی حملے میں جنرل کی ہلاکت پر ایران کا شدید ردعمل

امریکی حملے میں جنرل کی ہلاکت پر ایران کا شدید ردعمل


بغداد(24نیوز) ایران نے بغداد میں امریکی حملے میں ایرانی جنرل کی ہلاکت پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے.

ایران کا کہنا ہے کہ امریکا نے عالمی دہشت گردی کی،  جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کا بدلہ لیا جائے گا۔ ایران نے تین روزہ قومی سوگ کا بھی اعلان کردیا۔ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای نے اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ امریکا کو اپنے کئے کی قیمت چکانا ہوگی۔

ادھر سوشل میڈیا پر اپنے بیان میں ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف کا کہنا ہے کہ القدس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی پر حملہ کر کے امریکا نے انتہائی خطرناک اور بے وقوفانہ حرکت کی، جنرل قاسم سلیمانی کی فورس داعش، القاعدہ اور النصرہ کیخلاف لڑائی میں سب سے مؤثر طاقت تھی، امریکا اپنی سرکش مہم جوئی کے نتائج کی ذمہ داری خود اٹھائے گا۔

واضح رہے کہ عراق میں بغداد ایئرپورٹ کے قریب امریکی راکٹ حملے میں ایرانی جنرل سمیت 5افراد ہلاک ہوئے، حملے میں 2گاڑیوں کو نشانہ بنایا گیا تھا. غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایرانی جنرل قاسم سلیمانی القدس فورس کے سربراہ تھے  جنہیں بغداد پہنچتے ہی نشانہ بنایا گیا۔  حملے میں ماری گئی دوسری اہم شخصیت عراقی پاپولر موبائلائزیشن فورس کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس تھی، جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کی تصدیق ہوتےہی امریکی صدرڈونلڈٹرمپ نےامریکی پرچم ٹویٹ کیا۔ 

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔