سندھی اجرک ایک انمول تحفہ

سندھی اجرک ایک انمول تحفہ


ٹھٹھہ(24 نیوز)سندھ کی صدیوں پرانی ثقافت کا ایک اہم جزو اجرک ہے جسے تمام بچے ،بوڑھے پسند کرتے ہیں،خواتین تو اس کی دیوانی ہیں یہ اجرک کے لباس سلوا کر پہنتی ہیں۔
کسی کو عزت دینی ہو۔ محبت اورعقیدت کا اظہارکرنا ہو۔ اپنا بنانا ہو تو اجرک کا تحفہ دیا جاتا ہے۔ یہ روایت آج کی نہیں صدیوں پرانی ہے،بعض مورخ دعویٰ کرتے ہیں کہ بزرگ ہستیوں کو بھی اجرک تحفے کے طور پر پیش کی گئی تھی۔
اجرک کے بغیرسندھ کی ثقافت کے روز مرہ کی زندگی ادھوری ہے،سندھ کے لوگ اسے اوڑھنے، پگڑی باندھنے اورکاندھے پر ڈالنے کے لئے استعمال کرتے ہیں،غم کے موقع پر بھی اجرک دے کردلاسے اورہمدردی کا اظہارکیا جاتا ہے۔
اصلی اجرک تو ہاتھ کی بنی ہوتی ہے لیکن مہنگائی میں اضافے کی وجہ سے اب وہ کام مشنوں سے لیا جارہا ہے۔اجرک توہمیشہ سندھی ثقافت کی پہچان بنی رہے گی۔ لیکن اس کے لئے چھوٹی صنعتوں کی سرپرستی کرنا ہوگی۔