گالف کنٹری کلب کیس،ریفرنس طلب،شیخ رشید خود مقدمہ لڑینگے

گالف کنٹری کلب کیس،ریفرنس طلب،شیخ رشید خود مقدمہ لڑینگے


اسلام آباد(24نیوز) سپریم کورٹ نے گالف کنٹری کلب اراضی کیس(Golf Country Club Case) میں نیب سے دائر ریفرنس کی کاپی طلب کرلی،عدالت نے شیخ رشید کو کیس میں دلائل دینے کی اجازت دے دی، شیخ رشید نے خود کیس لڑنے کا اعلان کردیا۔کہتےہیں کہ لاہور کا قبضہ گروپ ہر چیز کو خرید لیتا ہے، شیخ رشید نے ٹرین حادثہ پر قوم سے معافی بھی مانگ لی۔

سپریم کورٹ کے جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے گالف کنٹری کلب اراضی کیس کی سماعت کی۔وفاقی وزیر شیخ رشید احمد کیس میں عدالتی معاونت کیلیے پیش ہوئے،عدالت نے شیخ رشید کو مقدمے میں دلائل دینے کی اجازت دی  تو شیخ رشید نے کیس خود لڑنے کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ مقدمہ 9سال سے زیرالتوا ہے،لیز پر دی گئی زمین کی قیمت 200 ارب سے زیادہ ہے،کیس میں وکیل کو 45 لاکھ فیس دی ہے مگراب وہ 1 کروڑ مانگ رہا ہے۔

جسٹس عظمت سعید نے شیخ رشید سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ  شیخ صاحب آپ اس ملک کے سرتاج ہیں،اس کیس کو منطقی انجام تک پہنچاتے ہیں آیندہ سماعت پر تیاری کرکے آئیں۔نیب پراسیکیوٹر جنرل نے عدالت کو بتایا کہ اراضی کی لیز کے معاملے پر ریفرنس فائل کر دیا ہے، فرد جرم عائد ہونا ہے،عدالت نے مقدمہ کی سماعت آیندہ ایک ہفتے تک ملتوی کردی،عدالت  کے باہر میڈیاسےگفتگو کرتےہوئے شیخ رشید نے ٹرین حادثہ پر معافی مانگی اور مخالفین کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

اس سوال پر کہ آپ پرویز مشرف کے دور  میں کابینہ کا حصہ رہے اور رائل پام اراضی کی لیز کی منظوری کیوں دی، شیخ رشید نے کہاکہ میں 2003 میں وزیر ریلوے بنا مگر لیز 2001 میں دی گئی تھی۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer