اہم منصب پر بیٹھے ججوں کو ڈکٹیٹر نہیں ہونا چاہئیے:چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ

اہم منصب پر بیٹھے ججوں کو ڈکٹیٹر نہیں ہونا چاہئیے:چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ


کراچی( 24نیوز ) چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ جسٹس احمد علی ایم شیخ نے کہا ہے کہ لوگوں کو انصاف دلانے کے لیے تمام ججز دن رات ایک کرنے کاعہد کریں ، ججزکیلئے کوئی کیس ہائی پروفائل نہیں ہوتا ۔

کراچی کی نجی ہوٹل میں 41 مجسٹریٹس کے اعزاز میں سندھ جوڈیشل اکیڈمی کے جانب سے تقریب کا اہتمام کیاگیا ،اس موقع پر سندھ ہائیکورٹ کے چیف جسٹس احمد علی ایم شیخ نے کہاکہ اہم منصب پربیٹھے ججز کوڈکٹیٹرنہیں ہونا چاہئیے ، وہ لوگوں کو انصاف پہنچانے کے لئے دن رات ایک کردیں ، ہمارے فیصلوں میں تاخیرضرور ہوسکتی ہے لیکن بدیانتی نہیں ہوتی۔

یہ بھی پڑھیں:  چیف جسٹس پاکستان کا دیامر میں سکولوں کو جلائے جانے کا نوٹس

سپریم کورٹ کے سابق جج خلجی عارف حسین کا کہنا تھا کہ عدالتوں کا بنیادی کام لوگوں کو انصاف فراہم کرنا ہے، ججز کو معلوم ہونا چائیے جرم ثابت ہوجائے تو مجرم کو کتنے سال کی سزا دینی چاہئے۔

تقریب کے اختتام پرشریک جوڈیشل مجسٹریٹ میں تعریفی اسناد، لیپ ٹاپ اور کتابیں بھی تقسیم کی گئیں۔