ٹرمپ کا بیان ہماری توہین،امریکہ کے اضافی سفارتکاروں کو ملک بدر،فضائی ناکہ بندی کی جائے:عمران خان

ٹرمپ کا بیان ہماری توہین،امریکہ کے اضافی سفارتکاروں کو ملک بدر،فضائی ناکہ بندی کی جائے:عمران خان


اسلام آباد (24نیوز)چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے الزامات پر کہا ہے کہٹرمپ کا بیان ہماری توہین،امریکہ کے اضافی سفارتکاروں کو ملک بدر،فضائی ناکہ بندی کی جائے۔
تفصیلات کے مطابق عمران خان نے واضح کیا کہ انہوں نے شروع سے ہی اغیار کی جنگ کا حصہ بننے کی مخالفت کی اور اسے ’ کرائے کی جنگ‘ قرار دیا۔ پاکستان کو امریکہ کی دہشتگردی کے خلاف جنگ کا حصہ بننے کے باعث خود دہشتگردی کا سامنا کرنا پڑا جبکہ ہمارا معاشرہ انتہا پسندی کا شکار ہو کر گروہوں میں تقسیم ہوگیا۔ اس جنگ کے نتیجے میں ہم نے اپنے 70 ہزار شہریوں کی جانیں گنوائیں جبکہ ملکی معیشت کو 100 ار ب ڈالر کا نقصان اٹھانا پڑا۔ ’اتنے نقصان کے باوجود ناراض ٹرمپ کے طعنے سننے پڑے اور اب ہماری حکومت وہی باتیں کر رہی ہے جو میں شروع سے کہتا آرہا ہوں کہ ہمیں اس جنگ کا حصہ ہی نہیں بننا چاہیے تھا‘۔
انہوں نے کہا کہ اس سارے معاملے سے ہمیں یہ سبق ملتا ہے کہ کبھی بھی چند پیسوں کی خاطر کسی کیلئے استعمال نہیں ہونا چاہیے، ہم سرد جنگ میں سوویت یونین کے خلاف امریکہ کے اتحادی بنے اور سی آئی اے کو جہادی تیار کرنے کی اجازت دی، پھر کچھ ہی عرصے کے بعد امریکہ نے انہی لوگوں کو دہشتگرد قرار دے دیا اور ہم نے انہیں ختم کرنے کی کوششیں شروع کردیں۔


عمران خان نے کہا وقت آگیا ہے کہ ہم متحد ہو کر کھڑے ہوں اور امریکہ کو دوٹوک جواب دیں، اس ضمن میں پاکستان فوری طور پر 2 کام کرسکتا ہے۔ پہلا کام امریکہ کے تمام اضافی و غیر ضروری سفیروںاور انٹیلی جنس افسران کا بوریا بستر گول کرکے انہیں واپس بھیجیں ، دوسرا کام ہم امریکہ کی فضائی اور زمینی گزرگاہ بند کردیں کیونکہ یہ سہولیات طویل مدت سے امریکہ مفت میں استعمال کر رہا ہے۔
یاد رہے کہ چند روز پہلے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے پاکستان کیخلاف بیان سے دونوں ممالک کے حالات کشیدہ ہیں،دونوں ممالک کے درمیان بداعتمادی کی فضا پائی جاتی ہے۔
واضح رہے کہ امریکی صدر نے پاکستان کو دی جانیوالی امداد روکنے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا تھا کہ یہ امریکی بیوقوفی تھی جو پاکستان کو 33ارب ڈالر کی امداد دی گئی۔