صرف نیب والے سچے اورباقی سب چور ہیں؟

صرف نیب والے سچے اورباقی سب چور ہیں؟


اسلام آباد ( 24نیوز ) چیف جسٹس اسلام آباد میں ہسپتال کی زمین کے کیس میں نیب پربرہم ہوگئے۔انہوں نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ ایک درخواست پر پگڑیاں اچھالی جاتی ہیں،نیکی کے کام میں بھی نیب ٹانگ اڑا دیتا ہے،کیا صرف نیب والے سچے اورباقی سب چور ہیں؟عدالت نے چیئرمین نیب کوطلب کرلیا۔

سپریم کورٹ میں ہسپتالوں کی کمی پر ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی گئی، چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں بینچ نے کیس کی سماعت کی ہے،جسٹس اعجازالاحسن نے مقدمے کی سماعت کے دوران استفسار کیا کہ ترلائی میں بحرین حکومت کے اسپتال کی تعمیرکا کیا بنا؟سیکرٹری ہیلتھ نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ دوسو بیڈ کے اسپتال کا ابھی تک کچھ نہیں بنا۔

وکیل سی ڈی اے نے کہا کہ زمین کے حصول پر نیب نے انکوائری شروع کردی، چیف جسٹس کا استفسارکیا کہ سی ڈی اے کیلئے عدالتی حکم اہم ہے یا نیب؟نیب میں بیٹھی ایک خاتون بلیک میل کرکے اپنے کام کرارہی ہے،کیوں نہ چیئرمین نیب کا بطور سابق جج حاضری کا استثنیٰ ختم کردیں،نیب والوں کے وارنٹ جاری کئے تو پھرکیا عزت رہ جائے گی؟

چیف جسٹس نے نیب پر برہمی کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ نیب ہر معاملے میں انکوائری کرکے سسٹم روک دیتا ہے،سپریم کورٹ کے احکامات کی تذلیل کی جارہی ہے،نیب کی تحقیقات کا کوئی معیار ہے یا نہیں؟

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ایک درخواست پر لوگوں کی عزت ختم کردی جاتی ہے، نیب میں بیٹھی ایک خاتون لوگوں کو بلیک میل کرکے اپنے کام کرارہی ہے۔انہوں نے حکم دیا کہ چیئرمین نیب اور پراسیکیوٹر کو چیمبر میں طلب کرلیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer