ایرانی جنرل کو نشانہ کیوں بنایا گیا؟ امریکی صدر کا تہلکہ خیزبیان

ایرانی جنرل کو نشانہ کیوں بنایا گیا؟ امریکی صدر کا تہلکہ خیزبیان


واشنگٹن(24نیوز)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی پر حملے کا مقصد ایران سے جنگ کا آغاز نہیں ،جنگ کو روکنا ہے ، قاسم سلیمانی کو امریکی سفارتکاروں اور فوجیوں پر حملے کی منصوبہ بندی کرنے پر نشانہ بنایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کوایران میں جنگ شروع کرنے کے لئے نہیں بلکہ اس کو روکنے کے لئے نشانہ بنایا گیا،ہم نے جو کیا یہ پہلے ہوجانا چاہیے تھا، عراق پر حملہ کرکے بےگناہ لوگوں کو بھی اپنی جانیوں سے ہاتھ دھونا پڑا،ٹرمپ کا کہناتھا کہ ہمارے حملے کا مقصد جنگ کا آغاز نہیں بلکہ اس کو روکنا ہے۔

امریکی صدر کا مزید کہناتھا کہ، قاسم سلیمانی کو امریکی سفارتکاروں اور فوجیوں پر حملے کی منصوبہ بندی کرنے پر نشانہ بنایا گیا، امریکی فورسز نے ایک درست کارروائی کرتے ہوئے ان کو قتل کیا۔

واضح رہے کہ جنرل قاسم سلیمانی کی فورس داعش، القاعدہ اور النصرہ کیخلاف لڑائی میں سب سے مؤثر طاقت تھی،امریکہ نے یک طرفہ کارروائی کرتے ہوئے  بغداد ایئرپورٹ کے قریب  راکٹ حملے میں ایرانی جنرل  قاسم سلیمانی سمیت 5افراد کو ہلاک کردیا تھا۔