اول سے جماعت دہم تک قرآن کی تعلیم کو لازم قرار دے دیا گیا

 اول سے جماعت دہم تک قرآن کی تعلیم کو لازم قرار دے دیا گیا


لاہور(24نیوز) پنجاب اسمبلی میں قانون سازی کے بعد مساجد میں چار لاوڈ سپیکر لگانے کی اجازت دے دی گئی، پہلی کلاس سے دسویں تک قرآن کی تعلیم کو لازم قرار دے دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی کا اجلاس سپیکر رانا محمد اقبال خان کی زیر صدارت ایک گھنٹہ 15 منٹ کی تاخیر سے شروع ہوا، شہزاد منشی نے بتایا کہ یونین کونسل کی سطح پر کرسچن کی شادیاں رجسٹرڈ نہیں ہو رہیں، صوبائی وزیر خلیل طاہر سندھو نے معاملے کو فوری حل کرانے کی یقین دہانی کرائی، میاں اسلم اقبال نے بتایا کہ اسمبلی کی ہدایت کے باجود سمن آباد سے ملبہ نہیں اٹھایا گیا جس پر سپیکر نے 7 مئی کو متعلقہ افسران کو طلب کر لیا، ڈاکٹر وسیم اختر کے مسودہ قانون کو منظورکر لیا گیا ، اجلاس پیر کی سہ پہر دو بجے تک ملتوی کر دیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:ڈسٹرک ایجوکیشن اتھارٹی نے سکولوں کو جاری کروڑوں روپے کے فنڈز دبا لیے

ضرور پڑھیں:انکشاف 16 جون 2019

 دوسری جانب :پنجاب کے سرکاری تعلیمی اداروں کی حالت نہ بدل سکی ، پڑھو پنجاب بڑھو پنجاب کا دعوی نعروں تک محدود ، سی ڈی جی گرلز ہائی اسکول شالیمار میں طلبا کے ہاتھوں میں قلم کی بجائے جھاڑو تھما دیئے گئے۔ بچے پڑھائی چھوڑ کرصفائی ستھرائی میں مصروف۔شالیمار کے علاقہ میں واقع سی ڈی جی گرلز ہائی سکول میں وزیر اعلی پنجاب کے احکامات کے باوجود بچے صفائی کرنے پر مجبور ہیں۔

پڑھنا نہ بھولیں:اسکولوں سے ڈراپ آوٹ بچوں کے لیے بڑی خبر آگئی

  جس سے پنجاب حکومت کا پڑھو پنجاببڑھو پنجاب کا دعوی نعروں تک محدود رہ گیا ہے۔ مذکورہ سکول کے پرنسپل نے بچوں کو کتابوں کی جگہ جھاڑو تھما دیاہے۔والدین کا کہنا ہے کہ پرنسپل نے معصوم بچوں کو کوڑا کرکٹ اور اسکول کی گندگی صاف کرنے پر مامور کر دیا ہے ۔ دوسری جانب محکمہ سکول ایجوکیشن کا کہنا ہے کہ متعلقہ سکول ہیڈ کے خلاف بچوں سے صفائی کرانے پر سخت نوٹس لیا جائے گا۔

شازیہ بشیر

Content Writer