پشاور:پولیس احتجاجی طلبا پر ٹوٹ پڑی


پشاور( 24نیوز )فیسوں میں اضافے کے خلاف پشاور یونیورسٹی کے طلبا نے احتجاج کیا،پولیس نے احتجاجی طلبا کو تشدد کا نشانہ بنایا،لاٹھی چارج سے آٹھ طلبا زخمی ہوئے،پولیس نے پچیس طلبا کو گرفتار بھی کرلیا ہے۔
بتایا جاتا ہے کہ طلباءفیسوں میں بے رحمانہ اضافے پر صوبائی حکومت کیخلاف مظاہرہ کررہے تھے،پولیس نے پرامن طلباءپر لاٹھیاں بسائیں۔
چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے پشاور یونیورسٹی میں طلبا پر تشدد کی مذمت کی ہے،انہوں نے کہا ہے کہ پر امن احتجاج طلبا کا جمہوری حق ہے،حکمران اپنی مسلسل ناکامیوں کا بدلہ طلبا سے نہ لیں،گرفتار طلبا کو رہا کیاجائے اور فیس کم کی جائے۔
دوسری جانب طلباءنے کہا ہے کہ حکومت کی فرعونیت نہیں چلے گی، پشاور یونیورسٹی کے تمام طلباء داخلہ،سمسٹر اور ہاسٹل کی فیسوں میں اضافے کے خلاف پرامن احتجاج کررہے تھے کہ پولیس گردی کرتے ہوئے پر دھاوا بول دیا گیا۔ جس سے متعدد طلباء زخمی ہوگئے۔ واضح رہے اس احتجاج میںاسلامی جمعیت طلبہ سمیت تمام طلباءتنظیموں کے ساتھ ساتھ یونیورسٹی کے دیگر طلباءشامل تھے۔