پنجاب کیمسٹ اینڈ ڈرگ ایسوسی ایشن کی ہڑتال،شہریوں کو دواؤں کے حصول میں مشکلات کا سامنا


لاہور(24نیوز) پنجاب کیمسٹ اینڈ ڈرگ ایسوسی ایشن کی کال پر پنجاب کے مختلف اضلاع میں ہڑتال جاری، صوبے کے بیشتر اضلاع میں میڈیکل اسٹورز اور میڈیسن مارکیٹیں بند رہیں، اسپتالوں میں کئی آپریشن موخر کرنا پڑ گئے۔

تفصیلات کے مطابق ڈرگ ایکٹ 2017کے نفاذ پر پنجاب کیمسٹ اینڈ ڈرگ ایسوسی ایشن نے ہڑتال کا اعلان کر دیا۔ ہڑتال کی کال پر صوبے میں بیشتر میڈیکل اسٹور اور میڈیسن مارکیٹیں بند کر دی گئیں۔ صرف گوجرانوالہ کے اسپتالوں میں ادویات اور سرجری کا سامان دستیاب نہ ہونے پر 12 آپریشن موخر کرنا پڑگئے۔منڈی بہاؤالدین میں شٹرڈاؤن رہا۔ شہر میں 450 میڈیکل اسٹور بند کرکے احتجاجی بینرز آویزاں کردیئے گئے۔

دوسری جانب وزیرآباد میں ڈرگ ایسوسی ایشن کی کال پر مکمل ہڑتال دیکھنے میں آئی۔ میڈیکل اسٹور مالکان کا کہنا تھا کہ لائیسنس ہولڈر اسٹور مالکان سے 70 ہزار سے 1 لاکھ روپے سالانہ فیس وصول کرتے ہیں جو ناجائزہے جبکہ نارووال  میں میڈیکل اسٹورز مالکان اور ڈسٹر بیوٹرز نے ہڑتال کی۔ 300 سے زائد میڈیکل اسٹور اور ڈسٹری بیوشنز بند رہیں۔ ایسوسی ایشن کے عہدیداروں کا کہنا تھا کہ مطالبات منظور ہونے تک ہڑتال جاری رہے گی۔

واضح رہے کہ حافظ آباد میں بھی میڈیکل اسٹور مالکان نے ڈرگ ایکٹ 2017کے خلاف ہڑتال کی۔ تمام ہول سیل ڈیلرز اورمیڈیکل سٹورز بند رہے۔ شہریوں کو ادویات حاصل کرنے میں خاصی دشواری کا سامنا رہا۔