سندھ میں ٹائیفائڈ کے مریضوں میں اضافہ

سندھ میں ٹائیفائڈ کے مریضوں میں اضافہ


کراچی(24نیوز)سندھ میں ایکس ڈی آر ٹائیفائیڈ کے کیسز بڑھنے لگے جبکہ ملک میں اس مرض سے نمٹنے کیلئے ویکسین تک موجود نہیں۔

کراچی سمیت سندھ بھر میں ٹائیفائیڈ کا مرض حکومت سندھ کیلئے درد سر بن گیا ایک جانب ٹائیفائیڈ کا مرض کسی بھی ادویات کے خلاف بھرپور مزاحمت کی قوت رکھتا ہے تو دوسری جانب ٹائیفائیڈ کے دوران استعمال ہونے والے ویکسین بھی پاکستان میں ناپید ہے، سندھ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر طارق رفیع کہتے ہیں پاکستان میں ٹائیفائیڈ ویکسین نہ بنایا جانا بھی بڑا المیہ ہے۔

سندھ میں ٹائیفائیڈ سے متاثرہ مریضوں کی تعداد آٹھ ہزار سے تجاوز کرگئی ہے جبکہ محکمہ صحت نے ٹائیفائیڈ ویکسین کو قومی پروگرام میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے، ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ ٹائیفائیڈ سے بچنے کیلئے والدین بھی ذمہ داری کا احساس کریں اور صفائی ستھرائی کا خیال رکھیں۔

محکمہ صحت سندھ نے ٹائیفائیڈ کے بڑھتے ہوئے کیسز کے باعث ایکس ڈی آر ٹائیفائیڈ کے خلاف آئندہ ماہ سے مہم شروع کرنے کا بھی اعلان کیا۔