وفاقی کابینہ کا بیرون ملک سے رقوم واپس لانے کا فیصلہ


اسلام آباد (24 نیوز)وفاقی کابینہ کا بیرون ملک سے رقوم واپس لانے کا فیصلہ، ٹاسک فورس قائم کردی گئی؎

وفاقی وزیراطلات فوادچودھری کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وزیراعظم نےسکولوں میں جسمانی سزاؤں پر پابندی عا ئد کر دی ہے۔ وفاقی کابینہ نے بیرون ملک سے رقوم واپس لانے کا فیصلہ کر لیا ہے، باہر سے پیسےواپس لانےکیلئے ٹاسک فورس یونٹ قائم کیاجائے گا۔
شعبہ تعلیم کی بات کی جائے تو اس میں بہتری کیلئےشفقت محمود کی سربراہی میں ٹاسک فورس بنائی گئی ہے، بچوں سےزیادتی کےواقعات اورچائلڈ لیبرروکنےکےاقدامات کی منظوری دی گئی ہے۔ نجی سکولوں کی فیسوں کو مناسب سطح پر لایا جائے گا۔ مدارس اور سکولوں کا بنیادی نصاب ایک جیساہوگا، بچوں کےبنیادی حقوق کیلئے بھی حکومت نےاقدامات کی منظوری دی ہے۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ کابینہ نے 80 ارب کے جو صوابدیدی فنڈز تھےواپس کردیے ہیں،وفاقی وزارتوں اورڈویژنزکےتمام صوابدیدی فنڈزختم کردیےگئےہیں۔ کابینہ نے تعلیم، صحت اور صفائی کے منصوبوں پر خصوصی بات کی۔ تربیلا توسیع منصوبےمیں 25ارب روپےکی تحقیقات کی منظوری دی گئی ہے۔