لاشیں گرا کر امن قائم نہیں کیا جا سکتا:مشال ملک

لاشیں گرا کر امن قائم نہیں کیا جا سکتا:مشال ملک


اسلام آباد ( 24نیوز ) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جارحیت کیخلاف پورا پاکستان سڑکوں پر آگیا ،ملک کے شہر شہر میں کشمیریوں سے یکجہتی کے اظہار کیلئے جلسے،جلوس کیے جارہے ہیں،کہیں کہیں سیمینار ز کا بھی اہتمام کیا گیا ہے،صرف پاکستان میں ہی نہیں بیرون ممالک میں بھی پاکستانی اپنے بھائیوں سے بھر پور یکجہتی کا اظہار کررہے ہیں۔ پاکستان کی غیر متزلزل حمایت کا اعادہ کیا جائے گا۔

یاد رہے رواں ہفتے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے سرچ آپریشن کے نام پر اننت ناگ، شوپیاں اور پلوامہ میں معصوم لوگوں پر گولیاں چلائیں اور بعدازاں جنازوں میں شریک افراد پر بھی پیلٹ گنوں سے فائر کیے گئے، ان واقعات میں 19 بے گناہ کشمیری شہید جبکہ 100 سے زائد زخمی ہوچکے ہیں،بھارتی فوج کی ریاستی بربریت کے خلاف دنیا بھر میں اہل دل اور اہل درد بول اٹھے ہیں۔

3 اپریل کو وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی سربراہی میں کشمیر کی موجودہ صورتحال کے حوالے سے وفاقی کابینہ کے ہنگامی اجلاس میں 6 اپریل کو یومِ یکجہتی کشمیر منانے کا اعلان کیا گیا تھا،اس سلسلے میں پاکستان میں بھی کشمیری بھائیوں کے حق میں آج ملک بھر میں احتجاجی ریلیاں اور جلسے کیے جائیں گے۔

اسلام آباد میں جمعیت علمائے اسلام کے زیر اہتمام ریلی نکالی جائے گی جبکہ لاہور میں پی ٹی آئی سمیت مختلف تنظیموں کی جانب سے بھارت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے،نماز جمعہ کے بعد جماعت اسلامی کے کارکن ریلیاں نکالیں گے،سب سے بڑی ریلی کراچی میں ہوگی،ملتان میں جامع العلوم معصوم شاہ روڈ سے بڑی ریلی نکالی جائے گی۔

کراچی میں بھی پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم سمیت دیگر تنظیموں کی جانب سے مظلوم کشمیری بھائیوں کے حق میں احتجاجی ریلیوں کا اہتمام کیا گیا ہے،پشاور میں مختلف سیاسی و سماجی تنظیمیں بھارت کے خلاف نکلیں گی اور سیکڑوں افراد بھارتی ظلم کے خلاف احتجاج ریکارڈ کرائیں گے۔ اس کے ساتھ ساتھ بھارتی ظلم و جبر کے خلاف پاکستان کی جانب سے مختلف عالمی فورمز پر بھی بھرپور آواز اٹھائی جارہی ہے۔

کشمیری خاتون رہنما مشال ملک  نے جی سی یونیورسٹی میں طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نہتے کشمیری بھارت کی 8 لاکھ فوج کا مقابلہ کر رہے ہیں لیکن لاشیں گرا کر امن قائم نہیں کیا جا سکتا۔ اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد کا کوئی وقت مخصوص نہیں، پاکستان کو کشمیر کا مسئلہ حل کرانے کے لیے عالمی سطح پر اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیرمیں زبردستی اپنا تسلط برقراررکھنا چاہتا ہے۔مسئلہ کشمیرکی وجہ سے جنگ چھڑسکتی ہے۔ مسئلہ کشمیرکی وجہ سے جنگ چھڑسکتی ہے۔کشمیرمیں بچوں کے اسکول بیگ جلائے جارہے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں قصائی کی دکان کھولی ہوئی ہے۔ پاکستانی نوجوان کشمیر کی آزادی کے لیے اپنا کردار ادا کریں جو کشمیری عوام کے لیے سوشل میڈیا پر بھرپور مہم چلا سکتے ہیں، ہمیں ہر محاذ پر کشمیر کی جدوجہد آزادی کیلئے آواز بلند کرنا ہو گی۔