ادویات کی قیمتوں میں کمی، سپریم کورٹ نے رپورٹ طلب کر لی


اسلام اآباد(24نیوز) سپریم کورٹ نے ادویات کی قیمتوں میں کمی سےمتعلق تفصیلی رپورٹ طلب کرلی ، چیف جسٹس نے کہا کہ مفاد عامہ کے معاملات کوکسی اورفورم پرجانے کی اجازت نہیں دیں گے ، معاملات جلد ختم کرنا چاہتے ہیں، ایسا نہ ہو بعد میں نعرے لگیں کہ کچھ نہیں کیا باتیں کرکے چلے گئے۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس میاں ثاقب نثارکی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے ادویات کی قیمتوں میں کمی سے متعلق کیس کی سماعت کی۔سیکرٹری صحت نے عبوری رپورٹ عدالت میں پیش کی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ مفاد عامہ کے معاملات کویہاں ہی حل کریں گے۔کسی اورفورم پرجانے کی اجازت نہیں دیں گے۔ تفصیلی رپورٹ کودیکھ کرفیصلہ کریں گے۔

یہ بھی ضرور پڑھیں:پاکستان میں سگریٹ نوشی، ماہرین صحت کا حکومت سے بڑا مطالبہ 

 دوسری جانب عدالت میں موجود ایک شہری نے فارما انڈسٹری کوٹیکس فری قراردینے کا تجویز پیش کر دی۔چیف جسٹس نے ٹیکس کا معاملہ عدالت کے دائرہ اختیار باہر قرار دیا۔ کہا یہ فیصلہ پارلیمنٹ نے کرنا ہے۔ عدالت صرف موجود قوانین کے تحت معاملات کودیکھتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:حکومت نے صحت کے شعبہ میں بہتری لانے کیلئے بہت کام کیا ہے: سائرہ افضل 

 واضح رہے کہ وکیل فارما نے کیس کی تاریخ مانگی تو چیف جسٹس بولے کہ معاملات کوجلد ختم کرنے کے خواہشمند ہیں۔چاہے رات دن بیٹھنا پڑے پورا معاملہ سنیں گے۔ یہ نہ ہو بعد میں نعرے لگیں کہ کیا کچھ نہیں۔ باتیں کرکے چلے گئے۔ جبکہ عدالت نے قیمتوں میں کمی سے متعلق تفصیلی رپورٹ طلب کرتےہوئے سماعت 15مئی تک ملتوی کردی۔