سلمان خان کی رہائی کھٹائی میں پڑ گئی،چلبل پانڈے جیل میں رہنے پر مجبور


24نیوز: سلمان خان کی ضمانت کی درخواست پرفیصلہ کل سنایا جائے گا۔ دبنگ خان کوایک رات اورجیل میں گزارنا پڑگئی۔ کیس لڑنے پرسلمان خان کے وکیل کودھمکیاں ملنے لگیں۔ دبنگ خان نے جیل کی دال روٹی کھانے سے انکارکردیا۔

 تفصیلات کے مطابق ٹائیگرکی ایک اوررات سلاخوں پیچھے گزرے گی۔ عدالت نے سلمان خا ن کی فوری سماعت کی خواہش پوری نہ کی۔

سلمان خان نے جودھ پورکی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ میں درخواست ضمانت دائرکی۔ جج رویندرا جوشی نے درخواست ہفتہ کی صبح سماعت کے لیے مقررکردی۔

سلمان خان کے وکیل مہیش بورا کا کہنا ہے کہ کیس کی واقعاتی شہادتیں تو موجود ہیں مگرکوئی عینی شاہد موجود نہیں۔ جن لوگوں نے گواہی دی وہ قابل اعتبارنہیں۔ سلمان خان کے وکیل کا کہنا ہے کہ انہیں کیس لڑنے پردھمکیاں دی جارہی ہیں۔ مہیش بورا کا کہنا ہے کہ انہیں روی پوجاری گینگ کی طرف سے دبئی اورآسٹریلیا سے دھمکی آمیز کالز موصول ہوئی ہیں۔

سلمان خان سے جیل میں ملاقاتی بھی ملنے آتے رہے۔ پہلے اداکارہ پریتی زنٹا نے سلمان خان سے جیل میں ملاقات کی۔ سلمان خان کی بہن بھی انہیں ملنے کےلیے آئیں۔ دبنگ خان کا باڈی گارڈ شیرا بھی ان سے ملاقات کرنے کےلیے آیا۔ سلمان خان جوجودھ پورسینٹرل جیل کے بیرک نمبرایک میں موجود ہیں۔ اوران کا قیدی نمبرایک سو چھ ہے۔ انہوں نے جیل کا کھانا کھانے سے انکارکردیا۔

سلمان خان کا بلڈ پریشرہائی ہے انہوں نے جیل میں صرف چائے کی پیالی ہی پی۔ سلمان خان کی ہرن شکارکیس میں پانچ سال قید کی سزا بھارت کا بڑا قومی مسئلہ بن گیا۔ ایک ہی کیس میں چارلوگوں کو بے گناہ اورسلمان خان کو گناہگارقراردیئےجانے پرقانونی ماہرین اپنی عدالت کوآڑے ہاتھوں لینے لگے۔

 بیس سال پہلے ہرن شکارکیس میں سلمان خان کو ملنے والی سزا پربھارتی میڈیا پرگرما گرم بحث جاری ہے۔ زیادہ ترقانونی ماہرین نے سلمان کو ملنے والی سزا کو ناانصافی قراردے دیا۔

قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ ایک کیس میں پانچ ملزم نامزد تھے جن میں سے چارکو شک کا فائدہ دے کربری کردیا گیا اورپانچویں سلمان خان کو کڑی سزادے دی گئی۔ اس فیصلے میں بہت بڑا قانونی سقم ہے۔جج نے فیصلے میں لکھا کہ سلمان خان ایک فلم سٹارہیں جن کی لوگ پیروی کرتے ہیں اس لیے انہیں قانون کا زیادہ پابند ہونا چاہیے۔ اس پرقانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ صاف لگتاہے کہ سلمان خان کو قربانی کا بکرا بنایا گیا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ سلمان خان پرجس ممنوعہ گن سے ہرن شکارکرنے کا الزام تھا اس سے جج نے بے بنیاد قراردے دیا مگرپھرانہیں پانچ سال قید کی سزاسنادی۔ اس لیے بھارت کے زیادہ ترقانونی ماہرین اس فیصلے کودرست نہیں سمجھتے ۔ ان کا خیال ہے کہ بھارت کی اعلیٰ عدلیہ اس فیصلے کو مسترد کردے گی۔

ٹائیگرکی ایک اوررات سلاخوں پیچھے گزرے گی۔ عدالت نے چلبل پانڈے کی ایک نہ سنی۔ درخواست ضمانت پر فیصلہ محفوظ کرلیا گیا۔ بھارتی وقت کے مطابق جودھ پور کی عدالت کل صبح ساڑھے دس بجے فیصلہ سنائے گی۔ سلمان خان کے وکیل مہیش بورانے عدالت میں کہا کہ عینی شاہدین کی گواہی قابل اعتبارنہیں۔ ایسے میں سلمان خان کو دی جانے والی سزاخاصی سخت ہے۔ مہیش بورا کے مطابق انہیں کیس لڑنے پردھمکیاں بھی دی جا رہی ہیں۔ انہیں روی پوجاری گینگ کی طرف سے دبئی اورآسٹریلیا سے دھمکی آمیزکالز کی گئیں۔