آرٹیکل 370 کا خاتمہ، بھارت نے اپنے ہی پاؤں پر کلہاڑی ماردی

آرٹیکل 370 کا خاتمہ، بھارت نے اپنے ہی پاؤں پر کلہاڑی ماردی


24نیوز: آرٹیکل 370 کا خاتمہ، بھارت نے اپنے ہی پاوں پر کلہاڑی ماری۔ پاکستان اس وقت مقبوضہ کشمیر پر قبضہ کر لے تو بھارت کسی بھی بین الاقوامی قانون کے تحت علاقہ واپس لینے کا مطالبہ نہیں کر سکتا۔ پاکستان متنازع علاقے کی حدود اور آئینی حیثیت میں تبدیلی کے خلاف فوری طور پر بین الاقوامی عدالت انصاف اور سلامتی کونسل سے رجوع کر سکتا ہے۔

شملہ معاہدہ1972۔پاکستان اوربھارت میں طے پایا تھاکہ دونوں ممالک کشمیر کی خصوصی حیثیت برقراررکھیں گے۔ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرکےاقوام متحدہ کی قراردادوں اورشملہ معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔

آرٹیکل370ختم کرنے سے ریاست جموں کشمیرکابھارت سے نام نہاد عارضی الحاق بھی ختم ہوچکا۔ آرٹیکل370مقبوضہ کشمیراوربھارت کے درمیان واحد آئینی لنک تھا۔ بھارت کسی بھی ترمیم یا تنسیخ کےلیے مقبوضہ کشمیر کی ریاستی اسمبلی سے باقاعدہ اجازت لینے کاپابند تھا۔

بھارت نےمقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کا محاصرہ ایک سال سے کررکھاتھا۔ مقبوضہ وادی میں پہلے گورنرراج پھرصدارتی نظام رائج کیا گیااورپھر آرٹیکل370ختم کرنے کی راہ ہموارکی۔

آرٹیکل370ختم ہونے پر بھارت مقبوضہ کشمیر پرقابض قوت بن چکا ہے۔لداخ کو مقبوضہ کشمیر سےالگ کرنا شملہ معاہدے اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی ہے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔