حکومت نے بینکنگ سیکٹر سے مزید 54 ارب کا قرض لیا ، اسٹیٹ بینک نے سچ بتا دیا

حکومت نے بینکنگ سیکٹر سے مزید 54 ارب کا قرض لیا ، اسٹیٹ بینک نے سچ بتا دیا


اسلام آباد (24 نیوز) حکومت نے بجٹ اخراجات پورے کرنے کے لیے ایک ہفتے کے دوران بینکنگ سیکٹر سے مزید 54 ارب روپے قرض لیے، اخراجات کے لیے مرکزی بینک کے قرضے کم پڑ گئے، کمرشل بینکوں سے بھی دوبارہ قرض لینا شروع کر دیا۔

 حکومت کو اخراجات پورےکرنےکے لیے مرکزی بینک کے قرضے کم پڑ گئے۔ بینکنگ سیکٹرسے54ارب روپے کےنئےقرضے لینےپڑگئے۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق جنوری کے تیسرے ہفتے کے دوران حکومت نے مرکزی بینک سے 41 ارب 25 کروڑ روپے کا نیا قرض لیا لیکن اخراجات پھر بھی پورے نا ہو سکے جس کے باعث کمرشل بینکوں سے بھی 12 ارب 67 کروڑ روپے قرض لینا پڑا۔

رواں مالی سال میں اب تک حکومت اخراجات کے لیے بینکنگ سیکٹر سے مجموعی طور پر 780 ارب 2 کروڑ روپے کے نئے قرضے لے چکی ہےجو گزشتہ مالی سال اس عرصے سے 133 فیصد زیادہ ہیں۔ ذرائع کے مطابق رواں مالی سال ایف بی آر کی طرف سے ٹیکس وصولیاں ہدف سے کم رہنے کے باعث بھی حکومت کو بینکنگ سیکٹر سے زیادہ قرض لینا پڑ رہا ہے۔

مالی سال کے پہلے سات ماہ کے دوران ایف بی آر کی ٹیکسوں کی وصولی ہدف سے 191 ارب روپے کم رہی، ایف بی آر والے 22 کھرب 51 ارب روپے کے ٹارگٹ کے مقابلے میں 20 کھرب 61 ارب روپے بھی پورے نا کر سکے۔

Malik Sultan Awan

Content Writer